کوٹ لکھپت : غربت سے گھر میں جھگڑے‘ بیروزگار مزدور نے بیوی کو قتل کر کے خودکشی کر لی

لاہور (میاں علی افضل سے) کوٹ لکھپت کے علاقے میں 3 بچوں کے مزدور باپ نے غربت اور گھر میں آئے روز جھگڑوں کے باعث بیوی کو چھریاں مارکر قتل کرنے کے بعد گلے میں پھندا ڈال کر خودکشی کرلی۔ بتایا گیا ہے کہ عوامی کالونی میں اصغر علی محنت مزدوری کرتا اور کرائے کے مکان میں بیوی بچوں کے ساتھ رہائش پذیر تھا۔ 9 ماہ قبل اپنی بیماری کے باعث اصغر نے کام چھوڑا جس کے بعد سے وہ مسلسل بیروزگار تھا، معاشی تنگدستی کا گھیرا تنگ ہونے پر اصغر نے اپنے بچے سکول سے ہٹا لئے اور اس کا 13سالہ بیٹا یاسر اور 8 سالہ ساجد نمکو فیکٹری میں محنت مزدوری کرکے گھر کا چولہا بجھنے سے بچانے میں جت گئے جبکہ 5 سالہ بیٹی صاحبہ گھر میں ماں کا کام کاج میں اپنی بساط کے مطابق ہاتھ بٹاتی مگر اصغر کے گھر سے غربت کے اندھیرے کم نہ ہوئے۔ اصغر کی بیوی آسیہ بچوں کو پڑھانا چاہتی تھی اسے معاشی پریشانیوں کے ساتھ ساتھ یہ دکھ بھی کھائے جا رہا تھا کہ اس کے بچے پڑھ لکھ کر کچھ بننے کی بجائے ساری عمر محنت مزدوری کرینگے۔ آئے روز بیروزگار شوہر اصغر سے اس کا جھگڑا رہنے لگا۔ گذشتہ روز بھی تلخ کلامی ہوئی تو اصغر نے مشتعل ہوکر چھریوں کے وار کرکے آسیہ کو قتل کر ڈالا اور بعدازاں اپنے گلے میں رسی کا پھندا ڈال کر خود بھی جان دیدی۔ تینوں بچے بے آسرا ہو جانے پر ماں باپ کی نعشوں سے لپٹ لپٹ کر روتے رہے اس المناک واقعہ پر محلہ میں ہر آنکھ اشکبار تھی۔ پولیس نے اصغر اور آسیہ کی نعشیں پوسٹ مارٹم کیلئے بھجوا کر مقدمہ درج کر لیا۔
خودکشی