امریکہ اور بھارت بلوچستان کو پاکستان سے الگ کرنا چاہتے ہیں: حافظ سعید

لاہور (خصوصی نامہ نگار + اے پی اے) امیر جماعۃ الدعوۃ پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ کل تک جو باتیں بھارت کرتا تھا وہی آج امریکہ کر رہا ہے۔ جماعۃ الدعوۃ کو بہت بڑا خطرہ قرار دیکر اس کیخلاف جھوٹا پراپیگنڈہ اور پابندیاں لگانے کے مطالبات کئے جا رہے ہیں۔ ہمارا خدمت خلق کا کام بھی انہیں برداشت نہیں ہورہا۔ امریکہ پاکستان پر جماعۃ الدعوۃ پر پابندیوں کیلئے دباؤ بڑھا رہا ہے لیکن ہم صاف طور پر کہتے ہیں کہ ان پابندیوں سے کوئی فرق نہیں پڑتا۔ جب تک آسمانوں سے پابندیاں نہ لگیں کوئی کسی کو نقصان نہیں پہنچا سکتا۔ دشمن جو چاہیں سازشیں کریں فیصلے اللہ کے ہاتھ میں ہیں اور اب امریکہ کے نہیں اسی کے فیصلے چلیں گے۔ جامع مسجد القادسیہ میں خطبہ جمعہ کے دوران انہوں نے کہا وزیراعظم نوازشریف کا امریکہ جا کر ڈرون حملوں کا مسئلہ اٹھانا اچھی بات ہے لیکن امریکہ ڈرون حملوں اور ڈاکٹر عافیہ صدیقی کے حوالے کوئی بات سننے کو تیار نہیں ہے۔ حافظ محمد سعید نے کہا آج اگر ڈرون حملوں کا مسئلہ اٹھایا جا رہا ہے تو یہ پچھلے تین برس چلائی جانیوالی اس تحریک کا نتیجہ ہے جو مذہبی و سیاسی جماعتوں کے مشترکہ پلیٹ فارم دفاع پاکستان کونسل کی طرف سے چلائی گئی۔ امریکی اس بات سے سخت تکلیف محسوس کرتے ہیں کہ جماعۃ الدعوۃ نے ڈرون حملوں کے خلاف تحریک میں بھرپور کردار ادا کیا اور پورے ملک کے کونے کونے میں جاکر رائے عامہ ہموار کی یہی وجہ ہے کہ نوازشریف کے دورہ امریکہ کے دوران جماعۃ الدعوۃ کو موضوع بحث بنایا گیا ہے۔ پاکستان کیخلاف امریکہ و بھارت کی سازشوں کو ناکام بنانا اور انکے گھناؤنے منصوبوں کو بے نقاب کرنا انہیں برداشت نہیں ہو رہا۔ امریکہ اور بھارت بلوچستان کو پاکستان سے الگ کرنا چاہتے تھے۔ وہ چاہتے تھے کہ افغانستان سے فوج نکال کر بلوچستان میں لا کر بٹھا دی جائے اور پھر جب اور جہاں چاہیں اسے استعمال کر سکیں۔ جماعۃ الدعوۃ نے ان سازشوں کے توڑ کیلئے بلوچستان میں کروڑوں روپے مالیت کے ریلیف کے منصوبے شروع کئے۔ زلزلے کے بعد ریلیف اور ریسکیو آپریشن کیا۔ عیدالاضحی پر متاثرین میں نئے ملبوسات، عید گفٹ پیک و کھلونے تقسیم کئے گئے اور قربانی کر کے گھر گھر گوشت پہنچایا گیا۔ ان حالات میں کہ جب دنیائے کفر ہمیں دین اسلام کی دعوت کا کام کرنے سے روکنا چاہتی ہے۔ ہمیں چاہئے کہ ہر شخص اللہ سے اپنے تعلق کو مضبوط کرے۔ بھارت و امریکہ کی سازشیں انشاء اللہ کامیاب نہیں ہو سکیں گی۔ پاکستان اس وقت بہت بڑی آزمائشوں سے دوچار ہے۔ جس طرح اللہ کے نبیؐ کے دور میں مدینہ خطرات میں گھرا ہو اتھا بالکل اسی طرح کلمہ طیبہ کی بنیاد پر حاصل کئے گئے ملک پاکستان کے گھیراؤ کی سازشیں کی جا رہی ہیں۔ میڈیا سے گفتگو میں میڈیا سے گفتگو میں حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ ملک میں ڈرون حملوں کے خلاف جماعتوں کو اکٹھا کر کے کامیاب تحریک چلائی جو امریکہ کو پسند نہیں آئی، ڈرون حملوں کے خلاف شعور کی آگاہی کے نتیجے میں سلامتی کونسل اور جنرل اسمبلی سمیت پوری دنیا میں ڈرون کا مسئلہ اجاگر ہوا، میرا جرم ڈرون حملوں پر آواز بلند کرنا اور تخریبی عناصر کو بے نقاب کرنا ہے، حکمرانوں نے اپنی کمزریوں کے باعث مسئلہ کشمیر کو بھی دہشت گردی کے نام پر پس پشت ڈال دیا گیا، امریکہ صرف اپنے مفاد کی سیاست کرتا ہے، پاکستان میں دہشت گردی اور تخریب کاری سے معیشت تباہ ہو چکی ہے، دہشت گردی امریکہ کی سرپرستی میں بھارت افغانستان کے راستے کر رہا ہے۔ حکمرانوں نے اپنی کمزریوں کے باعث مسئلہ کشمیر کو بھی دہشت گردی کے نام پر پس پشت ڈال دیا۔ امریکہ صرف اپنے مفاد کی سیاست کرتا ہے۔ اس نے 11/9 کے بعد پاکستان کی قربانیوں کو یاد نہیں رکھا۔ بھارت کی بلوچستان میں پاکستان مخالف تحریکیں کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ بلوچستان میں پاکستان کا سبز ہلالی پرچم تا ابد لہراتا رہے گا۔