چیف جسٹس لاہورہائیکورٹ نے مظفرگڑھ میں رکن قومی اسمبلی جمشید دستی کی جانب سے ڈاکٹروں اورنرسوں پرتشدد، ڈی پی او مظفرگڑھ کو ریکارڈ سمیت کل طلب کرلیا ۔

چیف جسٹس لاہورہائیکورٹ نے مظفرگڑھ میں رکن قومی اسمبلی جمشید دستی کی جانب سے ڈاکٹروں اورنرسوں پرتشدد،  ڈی پی او مظفرگڑھ کو ریکارڈ سمیت کل طلب کرلیا ۔

تین روز قبل ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹرزہسپتال مظفرگڑھ میں عملے کی مبینہ غفلت کے باعث ایک فوٹوگرافرکی ہلاکت کے بعد ڈاکٹروں پرتشدد کا واقعہ پیش آیا تھا جہاں نومنتخب ممبرقومی اسمبلی جمشید دستی کی موجودگی میں اس کے درجنوں ساتھیوں نے ہسپتال پردھاوا بول کر وہاں موجود ڈاکٹروں اورنرسوں پر وحشیانہ تشدد کیا اور توڑپھوڑ کی ۔ واقعہ کیخلاف گذشتہ روز پنجاب بھرکے سرکاری ہسپتالوں میں مکمل ہڑتال اوراحتجاجی مظاہرے کیے گئے ۔ آج چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ خواجہ محمد شریف نے واقعہ کا ازخود نوٹس لے کر ڈی پی او مظفرگڑھ کو کل ریکارڈ سمیت طلب کرلیا ہے اور ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کو ہدایت کی ہے کہ وہ اس سلسلے میں عدالت کی معاونت کریں ۔