لاہور ہائیکورٹ نے سعد رفیق سے آمدن کے ثبوت طلب کر لئے

لاہور (وقائع نگار خصوصی) لاہورہائیکورٹ کے مسٹر جسٹس عمر عطا بندیال نے مسلم لیگ ن کے رکن قومی اسمبلی خواجہ سعد رفیق کے خلاف دائر انتخابی عذرداری میں انکے وکیل کو ہدایت کی کہ وہ آئندہ تاریخ سماعت پر اپنی آمدن کے جائز ہونے کے بارے میں ثبوت پیش کریں تو عدالت یہ درخواست خارج کر دے گی۔ عدالت نے خواجہ سعد رفیق کے وکیل سے استفسار کیا کہ کیا وہ یہ ثابت کر سکتے ہیں کہ آمدن جائز ہے جس پر انکے وکیل نے کہا کہ وہ یہ ثابت کر سکتے ہیں۔ درخواست گزار ہمایوں اختر کی جانب سے دائر انتخابی عذر داری میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ خواجہ سعد رفیق نے اپنے اثاثے چھپائے اور یوں وہ انتخابی ضابطہ کی خلاف ورزی کے مرتکب ہوئے چنانچہ انہیں نااہل قرار دیا جائے۔ خواجہ سعد رفیق کی طرف سے عدالت کو آگاہ کیا گیا تھا کہ انکا پرائز بانڈ نکلا تھا۔ اس پر عدالت نے مذکورہ پرائز بانڈ نمبر اور بانڈ کیش کرائے جانے کے ثبوت طلب کرتے ہوئے سماعت ملتوی کر دی۔