ڈرگ انسپکٹرز کی ملی بھگت‘ لاہور میں پندرہ ہزار عطائی شہریوں کی زندگیوں سے کھیلنے لگے

لاہور (نیوز رپورٹر) محکمہ صحت پنجاب کے اعلیٰ حکام کی عدم توجہ سے صوبے میں عطائی ڈاکٹروں کی بھرمار سے شہریوں کی زندگیاں خطرے میں پڑ گئیں ہیں اس حولے سے بتایا گیا ہے کہ صرف لاہور شہر میں تقریباً 15000 کے قریب عطائی موجود ہیںجنہوں نے ڈرگ انسپکٹرز کی ملی بھگت سے میڈیکل سٹورز اور کلینک بنائے ہوئے ہیں اور ان میں اکثریت سرکاری ہسپتالوں کے وارڈ اٹنڈنٹس اور بیرون ملک کی ہے پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن نے پاکستان میڈیکل اینڈ ڈینٹل کونسل (پی ایم ڈی سی) کے ساتھ ملکر لاہور شہر سے عطائیوں کا خاتمہ کرنے کیلئے آگاہی مہم کا آغاز کیا تھا مگر مہم آگے بڑھ نہیں سکی جس کے بعد عطائیت کے خلاف کسی بھی پلیٹ فارم پر آواز اٹھائی نہیں جا رہی جس کے بعد عطائی شہریوں کی زندگیوں کے ساتھ کھیل رہے ہیں۔