لاہور: پولیس نے ماں بیٹی کے مقدمہ قتل میں رشتہ دار کو 11 برس بعد نامزد کر دیا، ملزم 4 سال بعد بری

لاہور (اپنے نامہ نگار سے) پولیس نے ماں بیٹی کے مقدمہ قتل میں 11 برس بعد بے گناہ کو نامزد کر دیا جو چار سال تک عدالتوں کے دھکے کھاتا رہا۔ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج شاہدہ سعید نے ملزم کو جرم ثابت نہ ہونے پر بری کر دیا۔ استغاثہ کے مطابق 21 مئی 2001ءکو نشتر کالونی کے علاقہ میں فاطمہ بی بی اور اسکی سات سالہ بیٹی کو نامعلوم افراد نے گھر میں گھس کر گلے میں پھندا ڈال کر قتل کردیا تھا۔