قربانیوں سے ہی مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں کو آزادی ملے گی: حافظ سعید

لاہور (خصوصی نامہ نگار) امیر جماعۃالدعوۃ پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ بھارت مسئلہ کشمیر کو خود اقوام متحدہ لیکر گیا لیکن اسکی قراردادوں پر آج تک عمل نہیں کیا گیا۔ مسلمان اپنے مسائل کے حل کی خاطر بیرونی قوتوں اور اداروں کے سامنے ہاتھ پھیلانا چھوڑ دیں۔ آزاد کشمیر کی طرح مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں کو بھی آزادی قربانیوں و شہادتوں کا راستہ اختیارکرنے سے ہی ملے گی۔ عراق اور شام کی طرح پاکستان میں بھی قتل و غارت گری پروان چڑھانے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔ کوئٹہ اور ملک کے دیگر حصوں میں ہونیوالے بم دھماکے اور دہشت گردی کی کاروائیاں انہی سازشوں کا حصہ ہیں۔ جامع مسجد القادسیہ میں نماز جمعہ کے بڑے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ غیرمسلم ممالک آپس میں ایک ہیں اور مسلمانوں کے خیرخواہ نہیں ہیں۔ اسلئے ہمیں ان سے امیدیں وابستہ نہیں کرنی چاہئیں۔ ہر روز کشمیریوںکو شہید اور انکی املاک کو نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ اسرائیل نے فلسطین کی ناکہ بندی کر رکھی ہے۔ مظلوم فلسطینی خیمہ بستیوںمیں آباد ہیں اور اسرائیلی جہاز نہتے فلسطینیوں کی بمباری کر رہے ہیں‘ کوئی انکی بات سننے کیلئے تیار نہیں ہوتا۔ کفار کا مسئلہ ہو تو اقوام متحدہ جیسے ادارے فی الفور حرکت میں آجاتے ہیں اور ترجیحی بنیادوں پر انہیں حل کرنے کی کوششیں کی جاتی ہیں لیکن مسلمانوں کے مسائل کی جانب کوئی توجہ نہیں دی جاتی۔