کثیر المنزلہ غیر قانونی عمارتوں کے خلاف آپریشن شروع

کثیر المنزلہ غیر قانونی عمارتوں کے خلاف آپریشن شروع

لاہور (خبر نگار) ڈی سی او لاہور رضوان محبوب کی ہدایت پر بغیر اجازت بنائی گئی کثیرالمنزلہ عمارتوں کے خلاف لاہور شہر کے تمام ٹاﺅنز میں آپریشن شروع کر دیا گیا ہے۔ گذشتہ روز ڈسٹرکٹ آفیسر (مانیٹرنگ اینڈ انکوائریز) امین اکبر چوپٹرا کی قیادت میں 24تعمیر شدہ اور زیر تعمیر غیر قانونی عمارتوں کو سر بمہر کرنے کے علاوہ تعمیراتی کام بھی رکوا دیئے گئے ہیں اور نوٹسز جاری کرنے کے ساتھ ساتھ مالکان کے خلاف مقدمات بھی درج کروادئیے گئے ہیں۔ جن عمارتوں کے خلاف کارروائی کی گئی اُن میں داتا گنج بخش ٹاﺅن کی ہسپتال روڈ پان منڈی، ڈوگر سنز مچھلی منڈی لوہاری گیٹ، آئیڈیل بک سنٹر مچھلی منڈی لوہاری گیٹ، امتیاز مچھلی منڈی لوہاری گیٹ، شاہد بٹ بالمقابل زمان پلازہ ہال روڈ، غلام محی الدین عقب مال مینشن، طاہر محمود قرطبہ چوک عقب گوگا نیلام گھر، بشیر احمد قرطبہ چوک عقب گوگا نیلام گھر، شوکت ٹیمپل روڈ بیرون عابد مارکیٹ، گلبرگ ٹاﺅن کی بمبے بلڈنگ گڑھی شاہو چوک، شالےمار ہسپتال، کوئےن مےری کالج، عزےز بھٹی ٹا ﺅن کی الاحسان وےلفےئر ٹرسٹ شالےمار لنک روڈ مغلپورہ، علامہ اقبال ٹاﺅن کی پلازہ سےکٹر(سی) بحرےہ ٹا ﺅن، کمرشل بلڈنگ بحرےہ ٹاﺅن، پلازہ سےکٹر(ای)بحرےہ ٹا ﺅن،سکول بلڈنگ سےکٹر (سی)، پلازہ سےکٹر(اے)بحرےہ ٹا ﺅن، پلازہ 153-Bبحرےہ ٹا ﺅن، پلازہ نزد تلوار چوک بحرےہ ٹاﺅن، بحرےہ ہائٹس سےکٹر (ڈی) کےنال بنک بحرےہ ٹاﺅن، پلازہ نزد چوک ےتےم خانہ، پلازہ ہنجروال ملتان روڈ شامل ہےں۔ راوی ٹاﺅن، شالےمار ٹاﺅن، نشتر ٹاﺅن، واہگہ ٹاﺅن اور سمن آباد ٹاﺅن کی طرف سے ڈی سی او آفس مےں رپورٹ جمع کروائی گئی تھی کہ ان کے ٹاﺅنز مےں کوئی غےر قانونی کئی منزلہ زےر تعمےر عمارتےں اور پلازے نہےں ہےں لیکن ان کے ٹاﺅنز میں بھی غیر قانونی زیر تعمیرعمارات پائی گئیں۔ راوی ٹاﺅن میں اس وقت بھی اندرون شہر میں کثیر المنزلہ عمارات کی تعمیر جاری ہے اورغیر قانونی طور پر تعمیر شدہ عمارات کے نیچے تہہ خانے تعمیر کئے جا رہے ہیں۔ علامہ اقبال روڈ پر دھرمپورہ نہر کے پل سے کینٹ کی حدود (ریلوے پھاٹک) تک 5 کثیر المنزلہ عمارتیں تعمیر ہو رہی ہیںجن میں تہہ خانے بھی تعمیر ہو رہے ہیں۔ شالیمار ٹاﺅن میں وسن پورہ، شادباغ، تاجپورہ میں 4سے 5منزلہ ایک درجن عمارات تعمیر ہو رہی ہیں یا ہو چکی ہیں مگر ٹاﺅن کا عملہ ان سے ”لا تعلق“ ہے۔
 آپریشن