ڈی جی کا ایف آئی اے ہیڈ کوارٹرز کا دورہ، افسروں کی کارکردگی پر عدم اطمینان

لاہور (خبر نگار) ڈائریکٹر جنرل ایف آئی اے سعود احمد مرزا نے ایف آئی لاہور کی کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے ایف آئی اے لاہور کے افسران کو ہدایت کی ہے کہ وہ اپنی کارکردگی بہتر کریں تاکہ وہ اگلی مرتبہ لاہور آئیں تو معاملات بہتر ہوں۔ انہوں نے این آر 3 سی کی کارکردگی پر خصوصاً عدم اطمینان کا اظہار کیا اور 4 ماہ میں صرف دو چھاپوں کو ناکافی قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ غیر قانونی ٹیلی فون ایکسچینج ایک جگہ پر لگی ہوئی ہوتی ہے۔ اس کا سراغ لگایا جا سکتا ہے۔ وہ گذشتہ روز ایف آئی اے ہیڈ کوارٹر لاہور میں ایف آئی اے افسران سے ملاقات میں ایف آئی اے لاہور کی کارکردگی کی بریفنگ کے دوران اپنے خالات کا اظہار کر رہے تھے۔ ڈائریکٹر جنرل ایف آئی اے نے افسران سے کہا کہ نیب ایف آئی ا ے کے دو شعبے اکنامک کرائم ونگ اور اینٹی کرپشن ونگ لینا چاہ رہی ہے۔ ایف آئی اے افسر اگر وہاں نہیں جانا چاہتے تو اپنی کارکردگی بہتر کریں۔ ڈائریکٹر جنرل نے کہا کہ پاکستان سے فرار ہونے والے ملزمان محسن حسیب، حبیب وڑائچ اور ملک عاصم کو پاکستان لانے کے لئے برطانیہ اور امارات کے امیگریشن افسروں سے رابطہ کریں، ان کی گرفتاری کے لئے ریڈ وارنٹ ہو چکے ہیں۔