ڈرون حملے: امریکہ نوازشریف کو آزمائش میں ڈالنا چاہتا ہے: ساجد میر

ڈرون حملے: امریکہ نوازشریف کو آزمائش میں ڈالنا چاہتا ہے: ساجد میر

لاہور (این این آئی) مرکزی جمعیت اہل حدیث کے سربراہ سینیٹر پروفیسر ساجد میر نے کہا ہے امریکہ کو طالبان سے مذاکرات کی کوشش پسند نہیں آئی اور اس نے ڈرون حملے جاری رکھنے کا اعلان کر دیا ہے، لگتا ہے کہ امریکہ نوازشریف کی حکومت کو نئی آزمائش میں ڈالنا چاہتا ہے‘ ہم سمجھتے ہیں امریکی ڈرون حملے پاکستان کی خودمختاری کی خلاف ورزی ہیں۔ اقوام متحدہ کو امریکی صدر کے بیان کا نوٹس لینا چاہئے۔ قوم اب کسی بھی قسم کی کڑوی گولی کھانے کے لئے تیار نہیں۔ اب پوری قوم کو اپنی سیاسی و عسکری قیادت کے ساتھ مل کر ملکی وقار اور اس کی خودمختاری کے تحفظ کی جنگ لڑنا ہو گی۔ نومنتخب حکومت اقتدار سنبھالتے ہی اس بارے میں دوٹوک اور واضح م¶قف اختیار کرے۔ ڈرون حملوں کے نتیجے میں دہشت گردی رکنے کی بجائے بڑھی ہے۔ امریکہ افغانستان میں اپنی شکست کا بدلہ پاکستان سے لینا چاہتا ہے۔ جس طرح ایٹمی دھماکوں کے موقع پر امریکی دباﺅ مسترد کیا گیا نوازشریف ڈرون حملوں کے بارے میں بھی ہر قسم کا دباﺅ مسترد کر دیں، پوری قوم ان کے ساتھ کھڑی ہے۔