چین کے ساتھ تعاون سے ترقی کی نئی راہیں کھلیں گی: اقبال احمد

لاہور (سپیشل رپورٹر) پاکستان کے پاس جو جغرافیائی حیثیت ہے اس کو ہم نے ترقی کے لئے استعمال کرنے کی بجائے ہمیشہ منفی استعمال کیا۔ چین کے پاکستان کے ساتھ تعاون سے ترقی کی نئی راہیں کھل سکتی ہیں اگر ہم چین کو گوادر سے پائپ لائن ہی دے دیں تو سالانہ اربوں ڈالر بغیر کچھ کئے کمانا شروع کر دیں گے۔ یہ باتیں سابق سفیر اقبال احمد خان نے روزنامہ نوائے وقت سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہیں۔ چین پہلے ہی نیوکلیئر تعاون کر رہا ہے، دو ایٹمی بجلی گھر کام کر رہے ہیں، تیسرے پر کام ہو رہا ہے جبکہ چوتھے پر اگلے سال سے کام شروع ہو جائے گا۔ چین کے ساتھ اکنامک ڈپلومیسی کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم تمام توانائی لگا کر 19 ہزار میگاواٹ بجلی پیدا کر سکتے ہیں۔ چین ایک ڈیم سے 23 ہزار میگاواٹ بجلی حاصل کر رہا ہے اس لئے ہمیں چین کو بجلی کے منصوبوں جن میں بھاشا ڈیم بھی شامل ہے اپنے ساتھ شامل کرنا چاہئے۔