پورے ملک میں آگ لگی ہوئی ہے، ذمہ دار سو رہے ہیں: لاہور ہائیکورٹ

پورے ملک میں آگ لگی ہوئی ہے، ذمہ دار سو رہے ہیں: لاہور ہائیکورٹ

 لاہور (وقائع نگار خصوصی) لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس خالد محمود خان نے الطاف حسین کی پاکستان توڑنے کے خلاف تقریر کیخلاف دائر درخواست پر الطاف حسین کے ٹیلی فونک خطاب پر پابندی لگانے کیلئے حکم امتناعی جاری کرنے کی درخواست کو مسترد کر دیا۔ الطاف حسین کیخلاف درخواست پر فیصلہ تمام فریقین کو سننے کے بعد دیا جائیگا۔ عدالت نے جمعہ کو اس بارے میں تحریک انصاف لائیرز فورم کے صدر مہر فیاض ایڈووکیٹ کی درخواست کی سماعت کر کے پی ٹی اے اور پیمرا سے جواب طلب کر لیا ۔دریں اثناءعدالت نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ پیمرا اور پی ٹی اے ایسی متنازعہ تقاریر پر ایکشن کیوں نہیں لیتے اور ایسے الفاظ کو نشر کیوں ہونے دیتے ہیں‘ عدالت نے کہا کہ پورے ملک میں آگ لگی ہوئی ہے اور ذمہ دار سو رہے ہیں ملکی سلامتی کے خلاف تقریریں نشر ہو رہی ہیں پی ٹی اے اور پیمرا کس طرح انہیں اجازت دیتے ہیں‘ الطاف حسین ایک غیر ملکی شہری ہیں وہ کس طرح پاکستان کی ایک سیاسی جماعت کے سربراہ بنے ہوئے ہیں۔ عدالت نے ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین ، پی ٹی اے اور پیمرا سے جواب طلب کر لیا۔