میوہسپتال انتظامیہ کی غفلت، رکشہ ڈرائیور لفٹ سے گر کر جاں بحق

لاہور (نامہ نگار) مےو ہسپتال مےں 20 سالہ رکشہ ڈرائےور لفٹ سے پانچوےں منزل سے نےچے گر کر ہلاک ہو گےا۔ ورثا نے واقعہ کو مےو ہسپتال انتظامےہ کی غفلت کا نتےجہ قرار دےتے ہوئے شدےد احتجا ج کےا ہے۔ بتاےا جاتا ہے کہ شاہدرہ پنڈ کا رہائشی 20 سالہ رکشہ ڈرائےور شہزاد اپنے دوست کی آنکھےںچےک کرانے کیلئے اسکے ساتھ مےوہسپتال کی آئی وارڈ مےں آےا جہاں ڈاکٹروں نے آنکھےں چےک کرنے کے بعد شہزاد کو دوائی لانے کیلئے کہا جس پر شہزاد لفٹ کے ذرےعے پانچوےں فلور پر جا رہا تھا کہ لفٹ رکنے پر اس نے دروازہ کھولا تو وہ باہر پانچوےں منزل پر آنے کی بجائے نےچے جا گرا جس سے وہ موقع پر جاںبحق ہو گےا۔ ہسپتال انتظامےہ نے لفٹ کا دروازہ خراب ہونے پر وہاں اےک بنچ لگا رکھا تھا۔ شہزاد کی ہلاکت کی اطلاع ملنے پر لواحقےن دھاڑےں مارتے ہسپتال پہنچ گئے۔ ورثا نے اس واقعہ کو ہسپتال انتظامےہ کی غفلت کا نتےجہ قرار دےتے ہوئے شدےد احتجا ج کےا ہے۔