مونس الٰہی کے ریمانڈ مےں 4 روز کی توسیع، ایف آئی اے کی 5گھنٹے تفتیش

لاہور (اپنے نامہ نگار سے+خبر نگار) جوڈیشل مجسٹریٹ نے ق لیگ کے رہنما مونس الٰہی کے جسمانی ریمانڈ میں مزید چار روز کی توسیع کر دی ہے۔بعدازاں ایف آئی اے کی تحقیقاتی ٹیم نے چودھری مونس الٰہی سے 5گھنٹے تفتیش کی۔ مونس الٰہی کو ایف آئی اے نے عدالت میں پیش کیا اور استدعا کی انہوں نے ملزم کے بیرون ملک اکاﺅنٹ سے37کروڑ کی رقم برآمد کرنی ہے اس لئے ملزم کو مزید ریمانڈ پر ان کے حوالے کیا جائے۔ مونس الٰہی کے وکیل نے کہا کہ ایف آئی اے چھ روز میں کچھ بھی برآمد نہیں کر سکی ہے۔ محض عدالت کا وقت ضائع کیا جا رہا ہے۔ میرے موکل کو سیاسی بنیاد پر ہراساں کیا جا رہا ہے۔ ایف آئی نے میرے موکل کو 70 سوالات پر مبنی سوالنامہ دیا تھا جو پُر کر کے ایف آئی اے حکام کو جمع کروا دیا گیا تھا۔ مونس الٰہی کے وکیل نے کہا کہ میرے موکل کو ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل ایف آئی اے ظفر قریشی انتقامی کارروائی کا نشانہ بنا رہے ہیں اور بلاوجہ تنگ کر رہے ہیں۔ فریقین کے دلائل سننے کے بعد عدالت نے ملزم کے جسمانی ریمانڈ میں چار روز کا اضافہ کر دیا ہے۔ اس موقع پر کارکنوں نے مونس الٰہی کے حق میں زبردست نعرے بازی کی۔