اہم مضامین کے لیکچررز کی 2005 سے زائد سیٹیں خالی

لاہور (اپنے نمائندے سے) لاہور سمیت پنجاب کے تمام چھوٹے بڑے اضلاع کے سرکاری تعلیمی اداروں جن میں طالبات کے کالجز کی بھی کثیر تعداد شامل ہے۔ وہاں زنانہ و مردانہ لیکچررز اور ایسوسی ایٹس پروفیسرز کی تعداد بہت کم ہے۔ محکمہ تعلیم کے ذرائع کے مطابق پنجاب میں 700 سے زائد لیکچراز کی اس وقت شدید قلت ہے اور مختلف اہم مضامین کی کئی کالجز میں ریگولر کلاسز بھی اساتذہ کی عدم دستیابی کی وجہ سے نہیں ہو رہی، یہاں یہ امرقابل ذکر ہے کہ ہائر ایجوکیشن نے متعدد بار پنجاب حکومت اور محکمہ تعلیم کے اعلیٰ حکام کو باور کرایا ہے کہ اس سے کالجز میں خصوصاً زنانہ کالجز میں لیکچرارز کی تعداد بہت کم ہے اور تدریسی سرگرمیاں بہت متاثر ہو رہی ہیں اور کئی کالجز میں اسلامیات پڑھانے والے اساتذہ کے ساتھ تین تین اضافی مضامین بھی پڑھا رہے ہیں اور پنجاب کے متعدد کالجزوں میں یہی صورتحال ہے۔