انسداد دہشت گردی عدالت، ماڈل ٹائون واقعہ میں گرفتار عوامی تحریک کے مزید 5 کارکنوں کی ضمانتیں منظور، رہا کرنے کا حکم

انسداد دہشت گردی عدالت، ماڈل ٹائون واقعہ میں گرفتار عوامی تحریک کے مزید 5 کارکنوں کی ضمانتیں منظور، رہا کرنے کا حکم

لاہور (اپنے نامہ نگار سے) انسداد دہشت گردی لاہور کی خصوصی عدالت نے ماڈل ٹائون واقعہ میں گرفتار عوامی تحریک کے مزید 5 کارکنوں کی ضمانتیں منظور کرتے ہوئے انہیں رہا کرنے کا حکم دے دیا۔ انسداد دہشت گردی لاہور کے جج خالد محمود رانجھا نے کیس کی سماعت کی۔ ملزمان کے وکیل عمران علی کاہلوں نے دلائل دیتے کہا عوامی تحریک کے کارکنوں کو سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا گیا اور ان پر بے بنیاد مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ عدالتی حکم پر تھانہ فیصل ٹائون کے ایس ایچ او کی جانب سے ریکارڈ عدالت میں پیش کیا گیا۔ پبلک پراسیکیوٹر نے کہا ملزموں کو ماڈل ٹائون کے علاقہ سے دہشت پھیلاتے ہوئے گرفتار کیا گیا لہٰذا عدالت ملزمان کی ضمانت کی درخواستیں مسترد کرے۔ تاہم عدالت نے انسداد دہشت گردی کی دفعات کے تحت درج مقدمہ میں گرفتار مزید پانچ ملزمان زاہد وغیرہ کو ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دے دیا۔ رہائی پانے والے عوامی تحریک کے پانچوں کارکنوں کو 50، 50 ہزار روپے کے ضمانتی مچلکے جمع کرانے کی ہدایت کی ہے۔
رہائی کا حکم