طالبان پاکستان میں کارروائیاں بند کر کے مذاکرات کی راہ اپنائیں : ساجدمیر

لاہور (سٹاف رپورٹر) مرکزی جعیت اہل حدیث کے سربراہ سینیٹر پروفیسر ساجدمیر نے کہا ہے کہ عالمی طاقتیں پاکستان کا استحکام نہیں چاہتیں، ملک کو خانہ جنگی کی طرف دھکیلا جا رہا ہے۔ فرقہ وارانہ اور لسانی بنیادوں پر قتل و غارت گری کی تازہ لہر کے پیچھے گہری سازش کار فرما ہے۔ پاکستان میں بھی طالبان کو چاہئے کہ وہ مسلح کارروائیاں بند کر کے مذاکرات اور امن کی راہ اپنائیں قطر میں امن مذاکرات میں پاکستان کا کردار فراموش نہیں کیا جا سکتا۔ طالبان کی طرف سے ممکنہ مذاکرات میں جنگ بندی پر جس بات چیت کا عندیہ دیا ہے اس سے افغان حکومت اور طالبان کے درمیان امن کی راہ ہموار ہو گی امریکہ اور طالبان کی اس جنگ سے پاکستان براہ راست متاثر ہوا ہے اور فرنٹ لائن اتحادی کی حیثیت سے اس نے اپنے ہزاروں شہریوں اور اربوں روپے کی املاک کر قربانی دی ہے اس لئے مستقبل میں افغانستان کے حوالے سے کوئی فیصلہ کرتے ہوئے امریکہ پاکستان کو بھی اعتماد میں لے۔