کنٹرول لائن کی خلاف ورزی کیخلاف سنی اتحاد کونسل نے یوم احتجاج منایا

لاہور (خصوصی نامہ نگار) بھارتی افواج کی طرف سے لائن آف کنٹرول کی خلاف ورزی کیخلاف ملک بھر مےں بھرپور ےوم احتجاج مناےا گےا۔ بھارتی افواج کی طرف سے لائن آف کنٹرول کی خلاف ورزی معمول بنتی جارہی ہے جو انتہائی افسوسناک اور قابل مذمت ہے۔ سنی اتحاد کونسل (سوادِ اعظم) اس کی شدےد مذمت کرتی ہے۔ پاک فوج کے کےپٹن کی بھارتی فوج کی طرف سے شہادت انتہائی تشوےشناک عمل ہے۔ سنی اتحاد کونسل کی طرف سے بھارت کی طرف سے جارحانہ عزائم اور پاکستانی سرحدی حدود کی خلاف ورزی کیخلاف ےوم احتجاج مناےا گےا۔ اس سلسلہ مےں لاہور سمےت ملک کے تمام چھوٹے بڑے شہروں مےں ہندوستان مردہ باد رےلےاں نکالی گئےں۔ لاہور مےں سردار محمد خان لغاری اور پےر سےّد صفدر شاہ گےلانی نے رےلی کی قےادت کی۔ اس موقع پر چئےرمےن سنی اتحاد کونسل و رکن پنجاب اسمبلی پےر سےّد محفوظ شاہ مشہدی نے کہا پوری قوم پاک فوج کے ساتھ ہےں۔ بھارتی فوج کو ےہ جان لےنا چاہےے۔ ہم اقوام متحدہ سے مطالبہ کرتے ہےں وہ بھارتی افواج کی سرحدوں کی خلاف ورزی کا نوٹس لے۔ علاوہ ازیں جمعہ کے اجتماعات میں بھارت کی اشتعال انگیزیوں کے خلاف تقریریں کی گئیں اور مذمتی قراردادیں منظور کی گئیں۔ اس موقع پر سنی اتحاد کونسل کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے مرکزی سنی رضوی مسجد میں جمعہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا پاکستان کی امن پسندی کی وجہ سے بھارت کے حوصلے بڑھتے جا رہے ہیں۔ حکومت بھارت کے جارحانہ رویے کے خلاف معذرت خواہانہ رویہ ترک کر کے عالمی برادری کو اصل حقائق سے آگاہ کرے۔ بھارت میں انتہاپسند غالب آ چکے ہیں۔ حاجی محمد حنیف طیب نے کراچی میں خطاب کرتے ہوئے کہا خطے میں امن کے قیام کیلئے بھارت کو جارحانہ رویہ ترک کرنا ہو گا۔ بھارتی اشتعال انگیزی دو ایٹمی ملکوں کے درمیان خطرناک تصادم کا باعث بن سکتی ہے۔ بھارت کنٹرول لائن پر فائر بندی معاہدے کی پابندی کرے۔ طارق محبوب نے حیدرآباد میں خطاب کرتے ہوئے کہا بھارت بدمست ہاتھی بن چکا ہے اور بھارتی اشتعال انگیزی کی وجہ سے جنوبی ایشیا کا امن خطرے میں پڑ گیا ہے۔ پیر محمد اطہر القادری نے محافظ ٹاﺅن لاہور میں خطاب کرتے ہوئے کہا بھارت بغل میں چھری منہ میں رام رام کی منافقانہ پالیسی پر عمل پیرا ہے۔