پاکستان کی مرضی کیخلاف کوئی فیصلہ قابل قبول نہیں : کشمیری قیادت

لاہور(نیوزرپورٹر)کشمیر پاکستان کی شہ رگ ہے۔ بھارت کی حکومت کشمیریوں کو ان کے جائز حق سے محروم رکھنا چاہتی ہے، ایسا کو ئی بھی فیصلہ پاکستان،کشمیریوں بلکہ دنیا کوقابل قبول نہیں ہو گا ۔کشمیری قیادت نے پاکستان کی جانب سے مسئلہ کشمیر کے حوالے سے اپنی پالیسی تبدیل نہ کرنے کے بیان کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا کہ مشیرخارجہ سرتاج عزیز نے بھارت کی جانب سے کئے جانے والے کسی بھی غلط اقدام کی برقت مخالفت کرتے ہوئے ہمیشہ کشمیریوں کو یہ احساس دلایاکہ ملکی حالات میں ابتری کے باوجود پاکستان کبھی بھی کشمیریوں کو تنہانہیں چھوڑے گا۔ سابق رکن قانون سازاسمبلی مولاناشفیع جوش‘ مسلم کانفرنس کے مرکزی نائب صدر مرزاصادق جرال‘ انچارج کشمیر سنٹرلاہورانعام الحسن کاشمیری‘ پی پی آزادکشمیر لاہورکے صدر فاروق آزاد‘ جماعت اسلامی کے رہنما اعجاز احمدکیانی اور مسلم لیگ ن کے راجہ شہزادحمدنے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں انتخابات کے بعد گورنرراج کے نفاذ کی کوئی ضرورت نہیں تھی لیکن ایسا کرنے کامقصد مقبوضہ کشمیرکوبراہ راست مرکزی بھارتی حکومت کے ماتحت لانا تھا۔ انہوں نے کہاکہ ہمیں یہ سمجھ لیناچاہئے کہ ہم بھارت سے دوستی کی چاہے لاکھ پینگیں بڑھائیں لیکن وہ ہمیں ڈسنے سے کسی صورت بازنہیں آئے گا۔