نئے صوبے، وفاقی حکومت کو دوبارہ نوٹس، ہائیکورٹ نے جواب طلب کرلیا

نئے صوبے، وفاقی حکومت کو دوبارہ نوٹس، ہائیکورٹ نے جواب طلب کرلیا

لاہور (وقائع نگار خصوصی) ہائیکورٹ نے نئے صوبوں کے قیام کے خلاف دائر درخواست پر وفاقی حکومت کو دوبارہ نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کرلیا۔ جسٹس شجاعت علی خان نے کیس کی سماعت کی۔ درخواست گزار نے موقف اختیار کیا کہ حکومت کی جانب سے نئے صوبوں کے قیام کے لئے غیر آئینی اقدامات کئے جارہے ہیں۔ آئین کے تحت کسی نئے صوبے کو قائم نہیں کیا جاسکتا۔ نئے صوبوں کی تشکیل آئین پاکستان کے بنیادی ڈھانچے سے متصادم ہے۔ تاوقتیکہ دستور میں دیا گیا طریقہ اختیار کیا جائے۔ وفاقی حکومت سیاسی مقاصد کے حصول کے لئے صوبوں کی جغرافیائی حیثیت کو تبدیل کرنا چاہتی ہے جوکہ عوامی مفاد کے خلاف ہے۔ ڈپٹی اٹارنی جنرل نے عدالت سے جواب داخل کرنے کے لئے مزید مہلت کی استدعا کی جس پر عدالت نے کیس کی مزید سماعت غیر معینہ مدت تک ملتوی کردی۔
جواب طلب