نظریہ پاکستان ٹرسٹ کے زیراہتمام قرارداد لاہور کی پلاٹینم جوبلی منانے کا فیصلہ

لاہور (خصوصی رپورٹر) 23مارچ 2015ء کو قرارداد لاہور (قرارداد پاکستان) کو منظور ہوئے 75سال ہو جائیں گے۔ نظریہ پاکستان ٹرسٹ کے زیراہتمام قرارداد لاہور کی اس پلاٹینم جوبلی کو انتہائی تزک و احتشام سے منایا جائے گا۔ اس امر کا فیصلہ نظریہ پاکستان ٹرسٹ کے چیئرمین ڈاکٹر مجید نظامی کی زیرصدارت ایوان کارکنان تحریک پاکستان لاہور میں منعقدہ ایک اجلاس میں کیا گیا جس میں نظریہ پاکستان ٹرسٹ کے وائس چیئرمین پروفیسر ڈاکٹر رفیق احمد، چیف جسٹس (ر) میاں محبوب احمد، لیفٹیننٹ جنرل (ر) ذوالفقار علی خان، چیف کوآرڈی نیٹر میاں فاروق الطاف اور سیکرٹری شاہد رشید نے شرکت کی۔ اجلاس کے مطابق آج 22مارچ 2014ء سے ہی پلاٹینم جوبلی تقریبات کا آغاز ہو جائے گا جو سال بھر جاری رہیں گی۔ ان تقریبات میں مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے خواتین و حضرات بالخصوص نوجوانوں کو شرکت کا بھرپور موقع فراہم کیا جائے گا۔ اجلاس میں نئی نسلوں کو قرارداد لاہور کی اہمیت اور اس کے پس منظر سے آگاہ کرنے کیلئے ایک جامع پروگرام مرتب کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ اجلاس میں کہا گیا کہ جن واقعات نے ہماری قوم کو نئی زندگی بخشی، آزادی سے ہمکنار کیا اور ترقی و خوشحالی کے راستے کھول دئیے انہیں شایان شان طریقے سے منانا حق بجانب بھی ہے اور ہم پر فرض بھی۔ انہی واقعات میں سرفہرست آل انڈیا مسلم لیگ کے 27ویں سالانہ اجلاس منعقدہ لاہور میں 23مارچ 1940ء کے روز پیش ہونے والی اور دوسرے دن منظور ہونے والی وہ قرارداد ہے جسے قرارداد لاہور یا عرف عام میں قرارداد پاکستان کہا جاتا ہے۔ اس سلسلے میں پہلی تقریب ’’دو روزہ سیمینار۔ یوم قرارداد لاہور 1940ء (قرارداد پاکستان)‘‘ کی صورت میں آج 22 اور کل 23مارچ (ہفتہ، اتوار) کو ساڑھے دس بجے صبح منعقد ہو گی جس کی صدارت تحریک پاکستان کے سرگرم کارکن، ممتاز صحافی اور نظریہ پاکستان ٹرسٹ کے چیئرمین ڈاکٹر مجید نظامی کریں گے۔ سیمینار کے پہلے روز پروفیسر ڈاکٹر رفیق احمد سیمینار کی غرض و غایت بیان کریں گے اور اس امر پر روشنی ڈالیں گے ’’قرارداد لاہور کا جنش کیوں منایا جائے؟‘‘ مسلم لیگی رہنما سابق رکن قومی اسمبلی محمد ریاض فتیانہ ’’قرارداد لاہور کا مقصد۔ جدید اسلامی جمہوری و فلاحی ریاست کا قیام‘‘ پر خطاب کریں گے۔ بیرسٹر ولید اقبال ’’قرارداد لاہور کی اساس۔ علامہ محمد اقبالؒ کا خطبہ الہ آباد 1930ئ‘‘ کو زیر بحث لائیں گے۔ جماعۃ الدعوۃ کے سرکردہ رہنما مولانا امیر حمزہ ’’قرارداد لاہور کے اسلامی پہلو‘‘ کو واضح کریں گے جبکہ معروف دانشور ڈاکٹر محمد اجمل نیازی ’’قرارداد لاہور پر مخالفین کا ردعمل‘‘ کے موضوع پر اظہار خیال کریں گے۔ سیمینار کے دوسرے دن 23مارچ بروز اتوار صدر مسلم لیگ (ن) اور وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہبازشریف اور گورنر پنجاب چودھری محمد سرور بطور مہمانان خاص شرکت کریں گے جبکہ ٹرسٹ کے چیف کوآرڈی نیٹر میاں فاروق الطاف اظہار سپاس پیش کریں گے۔ سیمینار میں خانوادہ حضرت سلطان باہوؒ صاحبزادہ سلطان احمد علی ’’قرارداد لاہور۔ قائداعظم محمد علی جناحؒ کا صدارتی خطبہ اور ہمہ گیر تائید‘‘ اور معروف ماہر قانون پروفیسر ہمایوں احسان ’’قرارداد لاہور اور قائداعظم محمد علی جناحؒ کا تصور پاکستان‘‘ کے موضوع پر اظہار خیال کریں گے۔