مشرف کیخلاف مقدمے سے دستبردار ہونے کی خبریں جھوٹی ہیں: اکرم شیخ

لاہور (وقائع نگار خصوصی)سابق صدر مشرف کیخلاف غداری مقدمہ کے پراسیکیوٹر اکرم شیخ ایڈووکیٹ نے کہا ہے کہ مشرف کا یہ مقدمہ سیاسی نہیں بلکہ آئینی ہے، میرے خلاف اس مقدمے سے دستبردار ہونے کی جھوٹی اور بے نبیاد خبریں شائع کی جا رہی ہیں اور میری شہرت کو نقصان پہنچانے کے لئے ایسے ہتھکنڈے استعمال کئے جا رہے ہیں۔ پرویز مشرف کے مقدمہ سے  دستبردار ہوا نہ ہی کوئی ایسا ارادہ رکھتا ہوں ۔ پریس کانفرنس میں انہوں نے کہا کہ میں ایک پیشہ ور وکیل ہوں،  مشرف کے مقدمہ میں بغیر کسی دبائو کے بطور پراسیکیوٹر اپنے فرائض سر انجام دیتا رہوں گا کسی قسم کی دھمکیوں سے نہیں ڈرتا، موت کا ایک وقت مقرر ہے جب وہ وقت آ جائے گا تو کوئی نہیں ٹال سکتا، میں کسی ادارے کے خلاف نہیں ہوں، حکومتی پراسیکیوٹر ہوں کسی کا ذاتی وفادار نہیں ہوں، مشرف کے خلاف کوئی تعصب نہیں ہے لیکن اس نے قوم کا کروڑوں روپیہ اپنی سکیورٹی پر لگایا ہے اگر اس مقدمہ میں الگ ہونے کا کوئی ارادہ ہوا تو اعلانیہ طور پر ہوں گا، مشرف کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں ہے اس کا بیرون ملک جانے کا معاملہ حکومت، سپریم کورٹ  اور مشرف کے درمیان ہے، جب تک میری جان میں جان ہے میں پرویز مشرف کے خلاف بطور پراسیکیوٹر پیش ہوتا رہوں گا اور اس کیس کے حوالے سے اس کا انجام ضرور دیکھوں گا، مشرف کے خلاف فاضل عدالت نے وارنٹ گرفتاری جاری کئے ہیں میرے خیال میں یہ سپریم کورٹ میں چیلنج نہیں کیا جاسکتا۔