مذاکرات کے بغیر حکومت کو آپریشن کا مشورہ دینے والے امن دشمن ہیں: عمران

لاہور+ اسلام آباد (ایجنسیاں) عمران خان نے کہا ہے کہ طالبان سے مذاکرات کو بھر پور موقع دینا چاہئے‘ مذاکرات کئے بغیر حکومت کو آپریشن کا مشورہ دینے والے امن کے دشمن ہیں‘ اگر ملک میں قانون کی حکمرانی ہوتی تو قومی اسمبلی میں بیٹھے ہوئے لوگوں کی اکثریت جیل میں ہوتی‘ ملک کی ترقی و خوشخالی کیلئے امن کا قیام ناگزیر ہے‘ خیبر پی کے میں سیاست سے پاک احتساب کا قانون لا رہے ہیں‘ غلطیوں کا صحیح تجزیہ کرنے سے چیلنجز کا صحیح طریقہ سے مقابلہ کیا جا سکتا ہے۔ ایک انٹرویو میں عمران نے کہا کہ فوجی آپریشن سے دہشت گردی ختم نہیں ہو سکتی اس لیے ہمیں مذاکرات کو بھرپور موقع دینا چاہئے اور اگر مذاکرات کامیاب نہیں ہوتے تو فوجی آپریشن آخری آپشن ہونا چاہئے۔ پانی کے عالمی دن پر پیغام میں عمران خان نے پانی کی اہمیت اور ملک میں اس کی قلت کے پیش نظر حکومت سے پانی کا ضیاع روکنے اور اس کی بچت کیلئے فوری اقدامات اٹھانے کا مطالبہ کیا ہے۔ ملک بھر میں 37فیصد آبادی کی پینے کے صاف پانی تک رسائی کو ریاست کی بڑی ناکامی قرار دیتے ہوئے سندھ طاس معاہدے کو ناکافی قرار دیتے ہوئے انہوں نے وفاقی حکومت سے بھارت اور افغانستان کے ساتھ پانی کا مسئلہ اٹھانے کا مطالبہ کیا اور ملکی مفادات کا تحفظ یقینی بنانے پر زور دیا۔