جماعۃ الدعوۃ کے زیراہتمام کل لاہور سمیت ملک بھر میں نظریہ پاکستان مارچ، کانفرنسیں ہونگی

لاہور (خصوصی نامہ نگار) جماعۃ الدعوۃ پاکستان کے زیراہتمام کل 23مارچ کو لاہور سمیت پانچوں صوبوں و آزاد کشمیر میں احیائے نظریہ پاکستان مارچ، جلسوں، ریلیوں اور کانفرنسوں کا انعقاد کیا جائے گا۔ انتظامات مکمل کر لئے گئے ہیں، یوم پاکستان کے موقع پر ہونے والے ان پروگراموں میں طلبائ، وکلائ، تاجروں، کسانوں اور دیگر شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے لاکھوں افراد شریک ہوں گے جبکہ جامع مسجد القادسیہ چوبرجی میں نماز جمعہ کے بڑے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے امیر جماعۃ الدعوۃ پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا کہ شکست خوردہ امریکہ اس خطہ سے نکلے گا تو بھارت بھی مقبوضہ کشمیر میں اپنا غاصبانہ قبضہ برقرار نہیں رکھ سکے گا، امریکہ، بھارت اور انکے اتحادی پاکستان کے ایٹمی پروگرام کو نقصان پہنچانے کی کوششیں کر رہے ہیں۔ ان حالات میں آنکھیں بند اور خاموشی اختیار کرنا درست نہیں۔ علاوہ ازیں نظریہ پاکستان مارچ اور جلسوں میں شرکت کیلئے ملک بھر کی مذہبی، سیاسی و کشمیری قیادت کو شرکت کی دعوت دی گئی ہے۔ سب سے بڑا پروگرام لاہور میں مینار پاکستان سے مسجد شہداء مال روڈ تک تاریخی نظریہ پاکستان مارچ ہو گا جس کیلئے تیاریاں و انتظامات مکمل کر لئے گئے ہیں۔ نظریہ پاکستان مارچ میں شرکت کیلئے صوبائی دارالحکومت لاہور اور گردونواح سے سینکڑوں مقامات پر سے قافلے ترتیب دئیے گئے ہیں جہاں سے لوگ جماعۃ الدعوۃ کے تحصیلی ذمہ داران اور مقامی علماء کرام کی قیادت میں پیدل، موٹر سائیکلوں اور گاڑیوں پر سوار ہوکر مینار پاکستان پہنچیں گے اور احیائے نظریہ پاکستان کا عزم کرتے ہوئے مارچ میں شریک ہو کر مسجد شہداء مال روڈ پہنچیں گے۔ اس موقع پر ایک بڑے جلسہ عام کا انعقاد بھی کیا جائے گا جس میں تمام مذہبی، سیاسی و کشمیری جماعتوں کے قائدین، عسکری ماہرین، طلبائ، وکلاء اور تاجر رہنما خطاب کریں گے۔  لاہورکی طرح گوجرانوالہ، فیصل آباد، سیالکوٹ، جہلم، اسلام آباد، ملتان، کراچی، بہاولپور، ڈی جی خان، ڈیرہ اسمٰعیل خاں، حیدرآباد، پشاور، کوئٹہ، مظفر آباد اور دیگر شہروں و علاقوں میں بھی نظریہ پاکستان مارچ، جلسے اورکانفرنسیں ہوں گی۔ المحمدیہ سٹوڈنٹس پاکستان نے بھی پورے ملک میں احیائے نظریہ پاکستان مہم کے سلسلہ میں ہونے والے پروگراموں میں بھرپور انداز میں شریک ہونے کا اعلان کیا ہے۔ علاوہ ازیں جماعۃ الدعوۃ پاکستان کی اپیل پر لاہور سمیت پانچوں صوبوں و آزاد کشمیرمیں دینی جماعتوں کے قائدین اور علماء کرام نے خطبات جمعہ میں تحفظ نظریہ پاکستان کو موضوع بنایا اور ہزاروں مساجد میں نماز جمعہ کے اجتماعات میں شریک لاکھوں افراد نے کل 23مارچ کو ملک بھر میں ہونے والے نظریہ پاکستان مارچ، جلسوں اور کانفرنسوں میں شرکت کا اعلان کیا ہے۔ بعض شہروں میں اجتماعی خطبات جمعہ کا بھی اہتمام کیاگیا۔ شرکاء نے اس عزم کا اظہار کیا کہ امریکہ، بھارت اور ان کے اتحادیوں کی سازشیں ناکام بنانے کیلئے پاکستان میں ایک بار پھر 1940ء والا ماحول پیدا کیا جائے گا۔ دشمنان اسلام مسلمانوں کو فرقہ واریت اور قومیتوں کی بنیاد پر لڑانا چاہتے ہیں۔ پاکستان کے ایٹمی پروگرام کو نشانہ بنانے کی سازشیں کی جارہی ہیں۔ان حالات میں پوری قوم کو لاالہ الااللہ کی بنیاد پر متحد کریں گے۔ حافظ سعید نے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ پاکستان کلمہ طیبہ کی بنیاد پر حاصل کیا گیا مگر الگ خطہ ملنے کے بعدیہاں مدینہ والا نظام نافذ نہیں کیا گیا۔ اسی وجہ سے پاکستان مصائب و مشکلات میں مبتلا ہوا۔ مشرقی پاکستان چھن گیا اور آج بھی اسے نقصانات سے دوچار کرنے کی کوششیں کی جارہی ہیں، نوجوان نسل میں یہ احساس اور شعور بیدا ر کرنے کی ضرورت ہے کہ لاالہ الااللہ کی بنیاد پر جس طرح قیام پاکستان کے موقع پر مسلمان ایک ہوئے تھے۔ کسی قسم کی فرقہ پرستی نہیں تھی۔ آج بھی وہی ماحول پیدا ہو گاتو ٹارگٹ کلنگ، بم دھماکے، فرقہ واریت اور آپس کے لڑائی جھگڑے کھڑے ہوں گے ، عام لوگوںمیں مایوسیاں پھیلائی جارہی ہیں اور قوم یرغمال بنی ہوئی ہے، اس وقت ایک ایسا لائحہ عمل وضع کرنے کی ضرورت ہے کہ لوگ اپنے قدموں پر کھڑے ہوںاور انہیں اس گرداب سے نکالا جائے، پاکستان کو حقیقی اسلامی ملک بنانے کی ضرورت ہے۔ انہوںنے کہاکہ کل 23مارچ کو لاہور سمیت پورے ملک میں احیائے نظریہ پاکستان مارچ ہوں گے۔ جماعۃالدعوۃ سیاسی امور کے سربراہ پروفیسر حافظ عبدالرحمن مکی نے جامع مسجد قباء میں اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ کلمہ طیبہ کی بنیادوں پر حاصل کئے گئے ملک کو نظریاتی و فکری طور پرنقصان پہنچانے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔  میر پور آزاد کشمیر میں جماعۃ الدعوۃ کے مرکزی رہنما مولانا امیر حمزہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان ایک نظریاتی ملک ہے، دشمن عناصر اس کی جڑوں کو کھوکھلا کرنا چاہتے ہیں۔ پاکستان اسی نظرئیے کی بنیاد پر قائم کیا گیا ہے، جس نظرئیے کے تحت مدینہ کی اسلامی ریاست قائم کی گئی تھی۔فیصل آباد میں مفتی عبدالرحمن عابد، یاض احمد، علی عمران شاہین اور دیگر نے مختلف مساجد میں خطبات جمعہ کے دوران کہاکہ اصل مسائل سے توجہ ہٹانے کے لیے عوام کو فرقہ واریت اور قومیت کی بنیاد پر لڑایا جا رہا ہے۔ جماعۃالدعوۃ اپنی تحریک کے ذریعے نظریہ پاکستان کا احیاء کر رہی ہے۔ قاری  یعقوب شیخ نے قینچی لاہور، حافظ عبدالغفار المدنی نے گھوڑے شاہ لاہور، مولانا ریاض الہیٰ ظہیر نے سمن آباد، حافظ عبدالماجد سلفی نے ٹائون شپ، مولانا اکرم ربانی نے کوٹ لکھپت، مولانا طاہر طیب بھٹوی نے المنور مسجد اسٹیشن، حافظ طلحہ سعید نے توحید مسجد جوہر ٹائون میں خطبات جمعہ کے اجتماعات سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کلمہ طیبہ کے نام پر بنائے گئے وطن عزیز کو سیکولر بنانے کی تمامتر سازشیں ناکام ہوں گی۔ جماعۃ الدعوۃ کے تحت 23 مارچ کو مینار پاکستان تا مسجد شہداء تک ہونے والا ’’نظریہ پاکستان مارچ‘‘ اس بات کا اظہار کرے گا کہ مسلمان عقیدہ توحید کی بنیاد پر ایک علیحدہ قوم ہے۔ علاوہ ازیں ازیں جماعۃ الدعوۃ کی طرف سے احیائے نظریہ پاکستان مہم کے سلسلہ میں گذشتہ روز بھی گونگے بہرے افراد اور المحمدیہ سٹوڈنٹس کی جانب سے زبردست احتجاجی مظاہرے کئے گئے۔ لاہور میںمرکز القادسیہ چوبرجی تا لاہور پریس کلب تک جماعۃالدعوۃ شعبہ ڈیف اینڈ ڈمب کی جانب سے احیائے نظریہ پاکستان ریلی نکالی گئی جس میں لاہور شہر اور گردونواح سے کثیر تعداد میں گونگے، بہرے ، نابینا اور معذور افراد نے شرکت کی۔ اس موقع پر شرکاء نے جماعۃالدعوۃ کی طرف سے ملک گیر سطح پر چلائی جانے والی احیائے نظریہ پاکستان مہم میں بھرپور انداز میں حصہ لینے کا اعلان کیا اور کہا ہے کہ اسلام و نظریہ پاکستان کے تحفظ کیلئے وہ ہر قسم کی قربانی دینے کیلئے تیار ہیں۔ المحمدیہ سٹوڈنٹس کے تحت لاہور میں آج ہفتہ کو پریس کلب تک نظریہ پاکستا ن ریلی نکالی جائے گی ۔ جمعہ کو پریس کلب کے سامنے احیائے نظریہ پاکستان ریلی کے اختتام پر جماعۃالدعوۃ ڈیف اینڈ ڈمب کے ناظم عبدالحمید بھٹہ، حافظ عثمان، نصیر اکبر،غازی ابو سعید، امجد علی و دیگر نے خطاب کیا۔ مقررین کے اشاروں کی زبان میں کئے جانے والے پرجوش خطابات کے دوران شرکاء میں زبردست جوش و جذبہ دیکھنے میں آیا۔ جماعۃالدعوۃ ڈیف اینڈ ڈمب کے ناظم عبدالحمید بھٹہ نے اپنے خطاب میں کہاکہ پانچوں صوبوں وآزاد کشمیر میں ہونے والے نظریہ پاکستان مارچ، جلسوں ،کانفرنسوں اور ریلیوں میں گونگے بہرے افراد بھرپور طریقہ سے شرکت کریں گے اور دنیا کو پیغام دیا جائے گا کہ پاکستان کو سیکولرملک بنانے کی سازشیں قوم کامیاب نہیں ہونے دے گی۔