بدعنوانی......ظفر علی راجا

کام‘ سفارش ہو‘ تو ہو جاتے ہَیں سب

ہر دفتر میں رشوت کی ہَے رسم رواں
ہر اک لب پر ایک سوال یہی ہَے آج
بدعنوانی ختم کرے گا کون یہاں