اختر لالیکا پیپلز پارٹی میں شامل، حمزہ شہباز کی تسلیاں بھی کارگر ثابت نہ ہو سکیں

 لاہور (خصوصی رپورٹر) مسلم لیگ (ن) ضلع بہاولنگر کے صدر ڈاکٹر اختر علی لالیکا مسلم لیگ (ن) چھوڑ کرپیپلز پارٹی میں شامل ہو گئے ہیں۔ اختر لالیکا کو قائدین سے گلہ تھا کہ انہوں نے ممتاز متیانہ کو مسلم لیگ ن میں شامل کیا اور بیورو کریسی کے کہنے پر ان کے سر پر سوار کر دیا۔ ان کو مسلم لیگ ن چھوڑنے سے روکنے کی مسلم لیگ ن ضلع بہاولنگر کے جنرل سیکرٹری حافظ محمود الحسن نے بہت کوششیں کیں اور تین روز قبل ان کی ماڈل ٹاﺅن میں مسلم لیگ ن کے رہنما حمزہ شہباز شریف سے ملاقات کرائی تاکہ اختر لالیکا کی شکر رنجیوں کا ازالہ ہو سکے۔ حمزہ شہباز کی تسلیاں بقول اختر لالیکا کے طفل تسلیاں ثابت ہوئیں۔ اختر لالیکا کا کہنا ہے کہ بیورو کریسی مسلم لیگ ن کو رسوا کروا کر دم لے گی۔