ق لیگ نے جے آئی ٹی مسترد کر دی: حکومت اخلاقی جواز کھو چکی،سراج الحق

ق لیگ نے جے آئی ٹی مسترد کر دی: حکومت اخلاقی جواز کھو چکی،سراج الحق

لاہور (خصوصی نامہ نگار+ نوائے وقت رپورٹ)امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعدکہاہے کہ پانامہ پر سپریم کورٹ کا فیصلہ آسمان سے گرا کھجور میں اٹکا کے مصداق ہے، فیصلے کے بعد حکومت کی اخلاقی ساکھ ختم ہوگئی۔ دو ججوں نے نوازشریف کو نااہل قرار دینے جبکہ تین نے جے آئی ٹی سے تحقیقات کرانے کا فیصلہ دیا، اس فیصلے کے بعد حکومت کو اخلاقی طور پر مستعفی ہو جانا چاہئے۔ ثابت ہو گیا حکومت اخلاقی حق حکمرانی کھو چکی، عوام جیت گئے ہیں اور کرپشن ہار گئی۔ کرپشن کا زبردست عوامی جدوجہد سے خاتمہ کریں گے۔ انہوں نے کہاکہ آج اس کیس کے فیصلہ سے عوام کو حوصلہ ملاہے کہ وزیراعظم کے اثاثوں کی تحقیقات ہوں گی۔ چار ماہ تک کیس لڑ کر ہم نے قوم کی طرف سے اپنا فرض پورا کیا۔ ق لیگ نے جے آئی ٹی کو مسترد کر دیا۔ چودھری شجاعت نے کہا ہے کہ نواز شریف فیصلے کے بعد وزارت عظمٰی کا حق کھو بیٹھے ہیں۔ عمران نے صحیح معنوں میں کردار ادا کیا۔ شیخ رشید اور دیگر لوگوں نے بھی اہم کردار ادا کیا۔ دو ججز کا فیصلہ کافی ہے کہ وزیراعظم صادق اور امین نہیں رہے۔ عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے نجی ٹی وی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ عدالت میں کوئی منی ٹریل نہیں دی گئی۔ پانچوں ججز نے قطری خط کو مسترد کیا۔ نواز شریف کس بات کی مٹھائیاں بانٹ رہے ہیں۔ آج سے پہلے آصف زرداری نے نواز شریف سے استعفے کا مطالبہ نہیں کیا۔ نواز شریف کو کلین چٹ نہیں ملی۔ طاہر القادری نے کہا کہ معاملہ جہاں سے چلا وہیں آ گیا۔ طہارت کے سرٹیفکیٹ کی کالک جے آئی ٹی کے منہ پر ملی جائے گی۔ بنچ نے جو سوالات دہرائے ان کے جواب لینے تو وکلاءعدالت آئے تھے۔ بہت پہلے کہا تھا ”انا للہ و انا الیہ راجعون“ آج پانامہ کی باضابطہ تدفین ہو گئی، قوم فاتحہ پڑھے اور صبر کرے، یہاں پر 100 لوگوں کو گولیاں مار دی جائیں فیصلہ تو کیا رپورٹ بھی نہیں آتی یہ تو سات سمندر پار کی کرپشن ہے۔ تحریک انصاف پنجاب کی پارلیمانی پارٹی کے سربراہ اور اپوزیشن لیڈر میاں محمود الرشید نے کہا کہ پگڑی سر پر رہی اور نہ ہی عزت بچی، دو ججوں کے اختلافی نوٹ کے بعد نواز شریف وزیراعظم رہنے کا اخلاقی جواز کھو بیٹھے، فوری استعفیٰ دیں، انہوں نے کہا کہ ملکی تاریخ میں نواز شریف وہ واحد وزیراعظم ہیں جن کی کرپشن اور منی لانڈرنگ کا کیس سپریم کورٹ میں چلا، پٹواری وزراءنے تفصیلی پڑھے بغیر مٹھائیاں بانٹ دی اور احاطہ سپریم کورٹ میں یہ تاثر دینے کی کوشش کی جیسے نواز شریف کیس جیت گیا۔
اپوزیشن جماعتیں