بدترین لوڈشیڈنگ ‘ شارٹ فال 61 سومیگاواٹ‘ بھارتی پنجاب نے مودی سے پاکستنا کو بجلی فروخت کرنے کی اجازت مانگ لی

بدترین لوڈشیڈنگ ‘ شارٹ فال 61 سومیگاواٹ‘ بھارتی پنجاب نے مودی سے پاکستنا کو بجلی فروخت کرنے کی اجازت مانگ لی

لاہور (نیوزرپورٹر+ نامہ نگاروںسے) بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ 18 گھنٹے سے تجاوز کرگیا۔ کئی کئی گھنٹے بجلی بند رہنے سے مساجد اور گھروں میں پانی نایاب ہونے لگا، راتوں کو بجلی غائب ہونے کے باعث عوام جاگنے پر مجبور ہوگئے۔ ڈیرہ مراد جمالی میں درجہ حرارت 48 تک جا پہنچا۔ بھارتی پنجاب میں اضافی بجلی مودی سے پاکستان کو فروخت کرنے کی اجازت مانگ لی گئی۔ لاہور سے نیوز رپورٹر کے مطابق بجلی کی مسلسل بندش اور گرڈ سٹیشن کے بند ہونے سے شہریوں کی زندگی اجیرن بنادی۔ لاہور اور اس کے مضافات میں غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ اور ٹرپنگ سے صارفین کی قیمتی الیکٹرونکس اشیاءجلنا بھی معمول بنا گیا۔ تفصیلات کے مطابق ملک میں بجلی کا خسارہ 61 سو میگاواٹ ہوگیاہ ے۔ بجلی کا خسارہ بڑھنے سے تمام تقسیم کار کمپنیوں کے سسٹم پر بوجھ بڑھ گیا ہے۔ لیسکو کا خسارہ بھی 14 سو میگاواٹ ہوگیا ہے۔ اقبال ٹاﺅن، سمن آباد، بند روڈ، ٹھوکر، جوہر ٹاﺅن، اچھرہ، نیو مسلم ٹاﺅن سمیت دیگر علاقوں میں گرڈ مسلسل 3 سے 5 گھنٹے بند رہتے ہیں جبکہ شمالی لاہور میں بجلی کی بندش کا دورانیہ بھی بڑھ گیا۔ لاہور میں لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ 14 سے 16 گھنٹے ہے۔ لاہور میں باغبانپورہ، مصری شاہ، جی ٹی روڈ کے علاقوں میں احتجاج جمعرات والے روز جاری رہا۔ نئی دہلی/چندی گڑھ سے اے این این کے مطابق بھارتی پنجاب کے وزیراعلیٰ امریندرسنگھ نے پاکستان کو بجلی کی فروخت کیلئے وزیراعظم نریندرمودی سے اجازت طلب کرلی۔ نئی دہلی میں مودی سے ملاقات میں وزیراعلیٰ امریندرسنگھ نے کہا کہ پنجاب کے پاس ایک ہزار میگاواٹ اضافی بجلی دستیاب ہے۔ یہ اضافی بجلی ہمسایہ ملکوں، پاکستان یا نیپال کو فروخت کرنے کی اجازت دی جائے۔ نورپور تھل سے نامہ نگار کے مطابق غلہ منڈی چوک میں غیر اعلانیہ طویل لوڈ شیڈنگ کے خلاف شہری،تاجر، مزدور سراپا احتجاج،ن لیگ کی حکومت نے عوام سے لوڈشیڈنگ کے عملی خاتمہ کا وعدہ فریب نکلا۔ گجرات سے نامہ نگار کے مطابق 20‘ 20 گھنٹے بجلی بند ہونے سے کاروباری لوگ‘ بزنس مین‘ تاجر برادری پریشانی میں مبتلا ہیں۔ نامہ نگار کے مطابق نارنگ منڈی و گردونواح میں بجلی کی لوڈشیڈنگ 18 گھنٹے سے بھی تجاوز کر گئی۔ تین عورتوں سمیت سات افراد شدید گرمی سے بے ہوش ہوگئے۔ مصطفی آباد/للیانی سے نمائندہ نوائے وقت کے مطابق نواحی دیہات میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 16 گھنٹے تک پہنچ گیا۔ نواحی دیہات کھارا‘ بھلو وڈانہ‘ لکھنیکے‘ کتلوہی کلاں وخورد‘ سرہالی کلاں و ورد‘ وہیگل‘آبراہیم آباد‘ بیدیاں‘ چھٹیانوالہ‘ وفتوہ‘ پکی حویلی‘ بھولکی و دیگر دیہات میں بدترین غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ عروج پر پہنچ گیا۔ سمندری سے نامہ نگار کے مطابق دورانیہ 20 گھنٹے تک جا پہنچا۔ گرمی اور بجلی کے ستائے لوگوں کی حکمرانوں کو بددعائیں۔ مصطفی آباد سے صباح نیوز کے مطابق گزشتہ روز مروزی انجمن تاجران کا اجلاس چیئرمین شوکت نواز میر کی صدارت میں ہوا۔ اجلاس میں تاجروں کی کثیر تعداد نے شرکت کی اور اپنی جانب سے مکمل تعاون کی یقین دہانی کرائی گئی۔ وہ آزادکشمیر کا سوئچ آف کر دیتے ہیں۔ وزیراعظم راجہ فاروق حیدر خان نے اعلان کیا تھا کہ جس علاقے میں شیڈول سے زیادہ بجلی بند کی جائے گی۔ ڈیرہ مراد جمالی سے صباح نیوز کے مطابق نصیرآباد سمیت گردونواح کے علاقوں میں قیامت خیز گرمی درجہ حرارت 48 سینٹی گریڈ تک پہنچ گیا۔ متعدد افراد کے بے ہوش ہونے کی اطلاعات‘ کاروبار زندگی مفلوج‘ لوگ اپنے گھروں میں محصور ہوکر رہ گئے۔ بجلی کی کئی کئی گھنٹوں کی غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ‘ عوام بلبلا اٹھے۔ پاکپتن سے نامہ نگار کے مطابق بجلی کی بدترین لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 18 گھنٹوں سے تجاوز کر گیا۔ ملکہ ہانس سے نامہ نگار کے مطابق سات روز سے بجلی کی مسلسل سولہ گھنٹے سے شہریوں کو اذیت میں مبتلا کر کے رکھ دیا۔ موچھ سے نامہ نگار کے مطابق کوٹ چاندانہ میں بجلی کی لوڈشیڈنگ عروج پر پہنچ گئی۔ سولہ سولہ گھنٹوں کی بدترین لوڈشیڈنگ سے نظام زندگی تباہ ہو گیا۔ کوٹ رادھا کشن سے نمائندہ نوائے وقت کے مطابق لوڈشےڈنگ کا دورانےہ 18گھنٹے تک جا پہنچا۔ معمولات زندگی شدےد متاثر۔ نامہ نگار کے مطابق بدوملہی اور گرد نواح میں بجلی کی بدترین لوڈ شیڈنگ شہریوں کی زندگی اجیرن ہوکر رہ گئی۔ صنعتی، تجارتی، مراکزکے علاوہ دکانداروں کا کام بھی ٹھپ ہوکر رہ گیا۔

لوڈشیڈنگ


لوڈ شیڈنگ