پنجاب یونیورسٹی کے ہاسٹل سے کالعدم تنظیم کا رہنما گرفتار‘حب میں9‘ پشاور میں ایک دہشت گرد گرفتار

لاہور+ پشاور+ حب (سٹاف رپورٹر+ ایجنسیاں) تھانہ مسلم ٹائون پولیس نے پنجاب یونیورسٹی کے ہاسٹل سے کالعدم تنظیم کے رہنما کو گرفتار کرلیا ہے۔ ملزم سے سکیورٹی اداروں، عدلیہ، جمہوری نظام اور حکومت کیخلاف لٹریچر بھی برآمد ہوا ہے ملزم کو تفتیش کیلئے نامعلوم مقام پر منتقل کردیا گیا۔ ملزم کی شہریار کے نام سے شناخت ہوئی ہے اور حیدر آباد کے ڈیفنس روڈ کا رہائشی بتایا گیا ہے۔ معلوم ہوا ہے کہ گذشتہ روز ایس ایچ او مسلم ٹائون ناصر حمید نے سر چ آپریشن کے دوران پنجاب یونیورسٹی کے ہاسٹل نمبر 14 میں چھاپہ مار کر 36 سالہ شہریار نامی شخص کو گرفتار کیا ہے۔ پنجاب یونیورسٹی کے ترجمان کا کہنا ہے کہ یونیورسٹی کے سکیورٹی گارڈز کی نشاندہی پرکالعدم تنظیم کے رہنما کو گرفتار کیا گیا ہے۔ ملزم ہاسٹل میں مقیم نہیں تھا اور نہ ہی پنجاب یونیورسٹی کا طالبعلم تھا۔ علاوہ ازیں محکمہ انسداد دہشت گردی نے پشاور میں سہربند کے علاقے میں خفیہ اطلاعات پر ایک گھر میں چھاپہ مار کر انتہائی اہم اور مطلوب دہشت گرد گرفتار کرلیا ہے۔ گرفتار ملزم عالم زیب کے سر کی قیمت خیبر پی کے حکومت نے 5 لاکھ روپے انعام مقرر کر رکھا تھا ۔ مزید برآں بلوچستان کے علاقہ حب میں ایف سی نے کارروائی کے دوران 9 دہشت گردوں کو گرفتار کرلیا۔ دہشت گرد تربت میں 20 مزدوروں کے قتل میں ملوث ہیں۔ چھاپے کے وقت دہشت گردوں کا اجلاس جاری تھا گرفتار دہشت گردوں کا تعلق بلوچستان نیشنلسٹ موومنٹ سے بتایا جاتا ہے۔ادھر پولیس نے پیر بابا بونیر میں کارروائی کرکے 2 دہشت گردوں کو گرفتار کرکے ان سے اسلحہ برآمدکرلیا۔