فوج کو کسی صورت یمن جنگ کا حصہ نہیں بننا چاہئے: مشائخ گول میز کانفرنس

لاہور (خصوصی نامہ نگار) پاک فوج کو کسی صورت یمن جنگ کا حصہ نہیں بننا چاہے پاکستان کو افغان جنگ میں حصہ لینے کی بناء پر آج تک اس کا صلہ مل رہا ہے ۔خانہ کعبہ اورروضہ کو کوئی خطرہ نہیں ہے ۔حرمین شریفین کے نام پر کسی مذہبی ،سیاسی اورکالعدم جماعت کو سیاسی مفادات حاصل کرنے کے لیے پاک فوج کو استعمال نہیں ہونے دیں گے خانہ کعبہ اور روضہ رسول ﷺ کی طرف میلی آنکھ سے دیکھنے والوں کو آنکھیں نکال باہر پھینکیں گے ڈالڑوں اور ریالوں کی سیاست ختم ہونی چاہئے ۔ مسلم حکمرانوں، او آئی سی اور اقوامِ متحدہ سے پوری پاکستانی قوم کی طرف سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ یمن بحران پر اپنا مصالحتی کردار ادا کریں۔ یہ بات نیشنل مشائخ کونسل پاکستان کے زیر اہتمام خدابخش کالونی میں آل پاکستان مشائخ گول میز کانفرنس کے صدارتی خطبہ میں پیر خواجہ غلام قطب الدین فریدی نے کہی اجلاس میں ملک بھر کے مشائخ اور گدی نشینوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی ۔