پنجاب میں صاف پانی کی فراہمی کیلئے میگا پراجیکٹ تیار، اگلے ماہ افتتاح ہو گا

لاہور (فرخ سعید خواجہ) حکومت پنجاب نے صوبہ بھر میں شہریوں کو پینے کا صاف پانی فراہم کرنے کے لئے میگا پراجیکٹ تیار کر لیا ہے۔ 10ارب روپے کی لاگت سے اس پراجیکٹ کا اگلے ماہ افتتاح ہو جائے گا۔ وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے اس پراجیکٹ کی تکمیل کرانے کی ذمہ داری پبلک افیئر یونٹ کے سربراہ میاں حمزہ شہباز پر ڈالی ہے اور انہیں ہدایت کی ہے اس کام کو چیلنج سمجھ کر کیا جائے۔ مشرف دور میں اربوں روپے کی بیرونی امداد سے پنجاب میں فلٹریشن پلانٹ لگاکر صاف پانی فراہم کرنے کے منصوبے پر کام شروع کیا گیا تھا لیکن اس وقت کی وفاقی حکومت کی غفلت کے باعث اربوں روپے کی رقم ضائع ہو گئی اور جو فلٹریشن پلانٹ لگائے گئے تھے ان میں سے 70فیصد بند ہو چکے ہیں۔ موجودہ حکومت نے برسراقتدار آتے ہی پنجاب کے عوام کو صاف پانی فراہم کرنے کے لئے منصوبے میں بدعنوانیوں اور بدانتظامی کا نوٹس لیتے ہوئے نئے فلٹریشن پلانٹ لگانے کا کام روک دیا تھا تاہم وزیراعلیٰ پنجاب کی ہدایت پر صوبہ پنجاب میں صاف پانی کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لئے نئے سرے سے منصوبہ بندی کی گئی اور اس مقصد کے لئے 10ارب روپے کی رقم مختص کی گئی۔ حمزہ شہباز کو وزیراعلیٰ پنجاب نے فلٹریشن پلانٹس لگانے کے پراجیکٹ کی نگرانی اس شرط پر سونپی کہ وہ خود اس کی دیکھ بھال کرینگے۔ ذرائع نے بتایا پراجیکٹ کے لئے ہوم ورک مکمل ہو گیا ہے اور اس بات کا اہتمام کیا جا رہا ہے جو کمپنی فلٹریشن پلانٹ لگائے گی وہی کمپنی 3سال تک اس کی دیکھ بھال کی ذمہ دار ہو گی۔ فلٹریشن پلانٹس کی کن علاقوں میں ضرورت ہے ممبران اسمبلی نے اس کی نشاندہی کی ہے۔ ذرائع نے بتایا اس حوالے سے حمزہ شہبازشریف کی صدارت میں اہم اجلاس آج جمعرات 8کلب روڈ پر ہو گا۔