پاکستان میں لوگ پانی کے نام پر زہر پی رہے ہیں‘ چند سال میں بحران شدید ہو جائیگا: گورنر پنجاب

پاکستان میں لوگ پانی کے نام پر زہر پی رہے ہیں‘  چند سال میں بحران شدید ہو جائیگا: گورنر پنجاب

لاہور (نیوز رپورٹر+ خصوصی رپورٹر) گورنر پنجاب چودھری محمد سرور نے کہا ہے کہ آئندہ چند برسوں میں پانی کا بحران بہت بڑھ جائے گا، ہمیں ابھی سے پانی کے بحران کو حل کرنے کیلئے اقدامات کرنے ہونگے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے آئی ای ای ای پی (IEEEP)کے زیراہتمام سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر وفاقی وزیر منصوبہ بندی کمشن احسن اقبال، انجینئر طاہر بشارت چیمہ، انجینئر امیر ضمیر خان نے بھی خطاب کیا۔ گورنر پنجاب نے مزید کہاکہ آج پاکستان کو دہشت گردی سمیت دیگر مسائل کا سامنا ہے تمام مکتبہ فکر کے لوگ اپنی صفوں میں اتحاد برقرار رکھیں تاکہ بیرونی سازشوں کو ناکام بنا سکیں۔ وفاقی وزیر احسن اقبال نے کہا کہ ہم نے فتووں کے پہاڑ کھڑے کر دئیے لیکن تعلیم حاصل کرنے کیلئے کوئی اقدام نہ کیا۔ افسوس کا مقام ہے کہ نوبل میں فیورٹ پیٹر اور گپتا کے نام آتے ہیں مگر کوئی جمال، کمال، عبداللہ نظر نہیں آتا۔ انہوں نے کہا کہ اسلام ٹیکنالوجی کی بات کرتا ہے ہم  یونیورسٹیوں کے علم پر قبضہ کرنے کی بجائے ایک دوسرے کی مساجد پر قبضہ کر رہے ہیں۔ واقعہ راولپنڈی سازش ہے، بے گناہ جانیں گئیں اور دنیا میں پاکستان کی بدنامی بھی ہوئی ہے۔ مقامی ہوٹل میں منعقدہ تقریب سے خطاب کے دوران انہوں نے کہاکہ مذہب کے نام پر کسی کو بھی فرقہ واریت کی اجازت نہیں دی جا سکتی، علما کو چاہئے کہ وہ فرقہ واریت کے خاتمے کیلئے اپنا کردار ادا کریں، حکومت سے کہوں گا کہ انگلش کو پانچویں جماعت تک بھی پڑھایا جائے۔ انہوں نے کہاکہ کسی کو مذہب کے نام پر فرقہ واریت اور افراتفری پھیلانے کی اجازت نہیں دی جا سکتی اور جو لوگ مذہب کے نام پر بے گناہ لوگوں کو نشانہ بنائیں گے ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی اور سانحہ راولپنڈی کے ذمہ داران بھی بچ نہیں سکیں گے۔ انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے ہم نے نوبل انعام حاصل کیا اور نہ ہی کبھی دنیا کے بڑے سائنسدانوں میں کسی پاکستان کو اعزاز ملا ہے اگر ہم مشہور ہیں تو ہم منفی باتوں کی وجہ سے دنیا میں مشہور ہو رہے ہیں۔ تقریب سے انجینئر امیر ضمیر نے کہا کہ انجینئرز کے سروس سٹرکچر کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کرنا ہونگے اس کے لئے حکومت جلدازجلد قانون سازی کرے۔ آی این پی کے مطابق گورنر پنجاب نے کہا ہے کہ پاکستان میں آج بھی لوگ پانی کے نام پر زہر پی رہے ہیں‘ صاف اور شفاف پانی بہت ضروری ہے‘ حکومت بجلی کے بحران کے حل کیلئے تمام وسائل بروئے کار لا رہی ہے بہت جلد عوام کو اس سے نجات مل جائے گی۔ دریں اثناء گورنر پجاب چودھری محمد سرو ر سے پاکستان کے دورے پر آئے ہوئے سکھ یاتریوں کے 300رُکنی وفد نے  گزشتہ  روزگورنر ہائوس  میں ملاقات کی۔ وفد کی قیادت سُرجیت سنگھ چودھری کر رہے تھے۔ اس موقع پر گورنر پنجاب نے کہا کہ پاکستان اقلیتوں کے رہنے کے لئے بہترین جگہ ہے جہاں نہ صرف انہیں زندگی کی تمام سہولتیں میسر ہیں بلکہ اپنی مذہبی رسومات کی ادائیگی میں بھی آزاد ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ پاکستانی پرچم میں سفید رنگ بھی اقلیتوں کے حقوق کی ضمانت ہے اور یہاں اُن کی آزادانہ نقل و حمل اور طرز زندگی اس بات کا عملی ثبوت ہے۔ گورنر نے کہا کہ پاکستانی حکومت سکھوں کے مذہبی مقامات کی آرائش اور ان کی حفاظت کے لئے تمام ضروری اقدامات کر رہی ہے اور ملک میں موجود سکھوں کے مذہبی مقامات کا دورہ کرنے والے سکھ یاتریوں کو بہترین سہولت فراہم کی جاتی ہیں۔ اس موقع پر سکھ یاتریوں کے سربراہ نے کہا کہ پاکستانی عوام سے مل کر انہیں اپنائیت کا احساس ہوا ہے۔ اُنہوں نے گورنر ہائوس لاہور میں مدعو کرنے پر گورنر پنجاب چودھری محمد سرور کا بھی شکریہ ادا کیا۔