قائداعظم اور علامہ اقبال کے فرمودات پر عمل کیا جائے : رانا مشہود ‘ عدیل برکی

لاہور (خبر نگار خصوصی) پنجاب اسمبلی کے ڈپٹی سپیکر رانا مشہود احمد خان اور معروف گلوکار عدیل برکی نے کہا ہے کہ قائداعظمؒ اور علامہ اقبالؒ کے فرمودات و ارشادات پر عمل پیرا ہو کر ہی پاکستان کو ترقی یافتہ بنایا جا سکتا ہے۔ جب تک نظریۂ پاکستان ٹرسٹ جیسا ادارہ موجود ہے تب تک وطن عزیز کو کوئی نقصان نہیں پہنچا سکتا۔ وہ نظریۂ پاکستان ٹرسٹ کے زیر اہتمام ایوان کارکنان تحریک پاکستان شاہراہ قائداعظمؒ لاہور میں نظریاتی سمر سکول کے بیسویں دن طلبہ و طالبات سے خطاب کر رہے تھے۔ تقریب کا باقاعدہ آغاز حسب روایت تلاوت قرآن مجید اور قومی ترانے سے ہوا۔ رانا مشہود احمد خان نے کہا کہ مجھے بے حد خوشی ہے کہ مجھے قوم کے مستقبل سے گفتگو کرنے کا موقع مل رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ نظریۂ پاکستان ٹرسٹ قوم کے مستقبل کی تعمیر کے لئے جو کارہائے نمایاں سرانجام دے رہا ہے اس کے لئے مجید نظامی اور ان کے رفقائے کار نہایت مبارکباد کے مستحق ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بچوں کو اپنے اندر وہ جذبہ پیدا کرنا چاہئے جو قائداعظمؒ‘ علامہ اقبالؒ اور ڈاکٹر عبدالقدیر خان میں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں مل جل کر اپنے گھر‘ اپنے ملک کے حالات درست کرنے کی ضرورت ہے۔ ہمیں ایسے سیاستدانوں‘ سائنسدانوں اور افسروں کی ضرورت ہے جو بے لوث ہو کر وطن کی خدمت کریں۔ ہمیں مخلص اساتذہ کی بھی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ مستقبل میں جب پاکستان کی تاریخ مرتب کی جائے گی تو نظریۂ پاکستان ٹرسٹ کی سرگرمیوں کو نمایاں مقام دیا جائے گا۔ معروف گلوکار عدیل برکی نے کہا کہ مجھے نظریاتی سمر سکول کے بچوں سے گفتگو کرتے ہوئے بے حد خوشی محسوس ہو رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ آپ اپنی ناکامیوں سے سیکھیں کیونکہ یہ ناکامی درحقیقت کامیابی کا پیش خیمہ ثابت ہوتی ہے۔ اس موقع پر عدیل برکی نے نظم ’’لب پہ آتی ہے دعا بن کے تمنا میری‘‘ اور مشہور ملی نغمہ ’’اے وطن پیارے وطن‘‘ اور ’’جیوے جیوے پاکستان‘‘ گایا۔ بچوں نے بھی ان کا ساتھ دیا۔ نظریاتی سمر سکول کی سرگرمیوں میں طلبہ و طالبات نے فینسی ڈریس شو منایا۔ بچے قائداعظمؒ، علامہ اقبالؒ، محترمہ فاطمہ جناحؒ کے گیٹ اپ کے علاوہ سندھی‘ بلوچی‘ کشمیری اور دیہاتی لباس پہن کر آئے تھے۔ بہترین گیٹ اپ کرنے والے طلبہ و طالبات کو انعامات دیئے گئے۔ مقابلہ مضمون نویسی میں مریم ظفر‘ دربخت‘ نور العین علی‘ مہک صابر‘ ماہ نور حفیظ‘ کائنات‘ سید مبین عباس‘ مٹھائی کی ٹوکریاں بنانے کے مقابلے میں بشریٰ کنول‘ انشہ‘ نوشیرواں‘ فاطمہ اسلم‘ منیبہ وحید‘ اریبہ وحید‘ فضا فاطمہ‘ بشریٰ فاروق‘ نورالعین‘ جیولری بکس بنانے کے مقابلے میں افق واسطی‘ طوبہ‘ ثمنہ‘ احسن سلمان‘ وردہ‘ عائشہ الیاس‘ مہر النسائ‘ فضا حسین‘ محمد عبداﷲ حسین اور عائشہ کو انعام دیا گیا۔ کوئز پروگرام میں محمد غضنفر‘ ارتضیٰ علی‘ احمد بن شفیق‘ احمد سلطان‘ رصمان الحق اور اسد اﷲ نے انعامات حاصل کیے۔ مزاحیہ مشاعرہ میں عروبہ علیم‘ محمد حسنین مجاہد کو انعامات دیئے گئے۔ نظریاتی سمر سکول کے بچوں نے رائیونڈ روڈ پر واقع پیروز کے بھوت گھر کا وزٹ کیا۔ تقریب کے اختتام پر مہمان خصوصی نے طلبہ و طالبات میں انعامات تقسیم کیے۔ نظریۂ پاکستان ٹرسٹ کے چیف کوارڈینیٹر میاں عزیز الحق قریشی نے رانا مشہود احمد خان اور عدیل برکی کو یادگاری شیلڈیں اور ٹرسٹ کی مطبوعات کا سیٹ پیش کیا۔ تقریب کا اختتام پاکستان‘ قائداعظمؒ علامہ اقبالؒ، مادرِ ملت اور نظریاتی سمر سکول زندہ باد کے نعروں سے ہوا۔