لاہور: جعلی ڈاکٹر کے آپریشن سے خاتون اور نومولود جاں بحق، ورثا کا مظاہرہ

لاہور (کرائم سیل) ہنجروال کے علاقہ میں جعلی ڈاکٹر کی لاپرواہی سے حاملہ خاتون اور اسکا بچہ دم توڑ گیا جس کے بعد لواحقین نے ڈاکٹر اور کلینک کی انتظامیہ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا اور نعرے بازی کی روڈ بلاک کردیا جس کی وجہ سے ٹریفک جام ہوگئی۔ اطلاع ملنے پر پولیس موقع پر پہنچ گئی اور عطائی ڈاکٹرکے خلاف حاملہ خاتون اور اسکے بچے کے قتل کے الزام میں مقدمہ درج کرکے اسے گرفتار کرلیا۔ معلوم ہوا ہے کہ بھٹہ چوک کی رہائشی حاملہ خاتون شمائلہ کو عزیز واقارب ہنجروال میں واقع ایک پرائیویٹ کلینک لے آئے جہاں جعلی ڈاکٹر سیف اللہ کی لاپرواہی سے حاملہ خاتون شمائلہ اور اسکا بچہ جاں بحق ہوگئے۔ اس واقعہ کے بعد ڈاکٹر اور ہسپتال کا عملہ موقع سے فرار ہونے لگا تو متوفیہ کے لواحقین اور عزیز و اقارب نے ڈاکٹر اور عملہ کو پکڑ لیا اور احتجاج کرنے کے بعد مقامی پولیس کو اطلاع کردی تاہم اس سلسلہ میں پولیس نے بتایا کہ تفتیش کے دوران معلوم ہواکہ ڈاکٹر جعلی تھا اور اسکی غفلت لاپرواہی سے ہی حاملہ خاتون اور اسکے بچے کی جان گئی۔ جعلی ڈاکٹر کو گرفتار کرکے کلینک کوتالا لگا دیا گیا۔