سلمان تاثیر کے قتل پر افسوس نہیں‘ ممتاز قادری نے عدالت کے 10 سوالوں کے جواب تیار کر لئے

راولپنڈی (آئی این پی) گورنر پنجاب سلمان تاثیر کے قتل میں گرفتار ایلیٹ فورس کے اہلکار ممتاز قادری نے انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نمبر 2 کے جج سید پرویز علی شاہ کی طرف سے فراہم کردہ دس سوالات کا تحریری جواب تیار کر لیا جسے وہ (آج) ہفتہ کو عدالت میں جمع کرائیں گے۔ عدالت ملزم کا بیان بھی ریکارڈ کرے گی‘ ملزم نے عدالتی سوالات اور اپنے بیان میں اقرار کیا کہ سلمان تاثیر نے توہین رسالت قانون کو کالا قرار دیا اور اسے ناپاک بھی کہا جس پر میں نے ایک گستاخ کو اس کے انجام تک پہنچا دیا مجھے کوئی شرمندگی نہیں‘ میرا ضمیر مطمئن اور دل پرسکون ہے۔ سوال نمبر دو کے جواب میں م¶قف اختیار کیا کہ اس نے گورنر پنجاب کے ساتھ سکیورٹی کی ڈیوٹی ازخود نہیں لگوائی۔ گورنر پنجاب ملعون آسیہ کی پشت پناہی بھی کر رہے تھے‘ انہوں نے ایک غیر مسلم اور غیر اہل کتاب سے شادی بھی کر رکھی تھی اور وہ مرتد ہو چکے تھے۔
ممتاز قادری