بارش‘ سیلاب‘ ڈینگی‘ بدامنی‘ مہنگائی‘ بیروزگاری”الٰہی ہمیں مصیبتوں سے نجات دلا“ نماز جمعہ کے اجتماعات میں خصوصی دعائیں

لاہور (خصوصی نامہ نگار) مذہبی جماعتوں کی اپیل پر ملک بھر کی مساجد میں گذشتہ روز نماز جمعہ کے موقع پر حالیہ طوفانی بارشوں، سیلابی صورتحال سے ہونے والی تباہی اور ڈینگی جیسے وبائی امراض اور دیگر قدرتی آفات سے بچاﺅ کیلئے گڑگڑا کر دعائیں کی گئیں۔ مولانا سمیع الحق، حافظ محمد سعید، عبدالرحمن مکی، مولانا عبدالمالک، مولانا فضل الرحیم اشرفی، علامہ ابتسام الٰہی ظہیر، مولانا امیر حمزہ اور صاحبزادہ زاہد محمود قاسمی نے کہا ہے کہ طوفانی بارشوں، سیلاب، زلزلوں اور دیگر قدرتی آفات سے بچنے کا واحد حل صرف اللہ کی طرف رجوع کرنا ہے ہر مسلمان کو چاہئے کہ وہ اللہ تعالیٰ سے اپنے گناہوں کی معافی مانگے اور انفرادی و اجتماعی طور پر توبہ کی جائے حکمرانوں کو بھی چاہیے کہ وہ بیرونی آقاﺅں کے سامنے ہاتھ پھیلانے کی بجائے اللہ کو راضی کریں۔ جمعیت علمائے اسلام، جماعة الدعوة پاکستان، اہلسنت والجماعت، جماعت اسلامی، تنظیم اسلامی اور دیگر مذہبی جماعتوں و علما کرام کی اپیل پر چاروں صوبوں و آزاد کشمیر کی مساجد میں ملک و قوم کی سلامتی، امن و استحکام اور سیلاب متاثرین کیلئے خصوصی دعائیں کی گئیں۔ اس موقع پر جماعة الدعوة پاکستان کے امیر پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ زلزلے، سیلاب اور دیگر قدرتی آفات اللہ کی طرف سے آزمائش ہیں مسلمانوں کو چاہئے کہ وہ اپنے عقائد و اعمال کی اصلاح کریں، اللہ سے گناہوں کی معافی مانگیں۔ جمعیت علمائے اسلام (س) کے امیر سینیٹر مولانا سمیع الحق، جمعیت اتحاد العلماءکے صدر مولانا عبدالمالک، جماعة الدعوة شعبہ سیاسی امور کے سربراہ حافظ عبدالرحمن مکی، مولانا فضل الرحیم اشرفی، علامہ ابتسام الٰہی ظہیر، مولانا امیر حمزہ اور صاحبزادہ زاہد محمود قاسمی نے بھی پاکستانی قوم سے اپیل کی ہے کہ وہ اللہ کی ناراضگی کی وجوہات بننے والے اعمال ترک کر دیں۔ جامع مسجد القادسیہ اور جامع اشرفیہ میں بڑے اجتماعات کا انعقاد ہوا۔ تاریخی عالمگیری بادشاہی مسجد لاہور میںایک بڑے اجتماع میں محکمہ اوقاف کی طرف سے ہدایت پر ڈینگی وائرس‘ وبائی امراض اور تباہ کن بارشوں کے خاتمہ کیلئے خصوصی اجتماعی دعا کی گئی۔ خطیب بادشاہی مسجد مولانا سید عبدالخبیر آزاد نے کہا کہ قدرتی آفات و موذی امراض ہماری اپنی ہی بداعمالیوں کا ہی نتیجہ ہیں لہٰذا من حیث القوم ہم سب کو اللہ تعالی کے حضور اپنی بداعمالیوں اور نافرمانیوں پر پکی و سچی اجتماعی توبہ کرنی چاہئے۔ نیز مولانا عبدالخبیر آزاد نے علما کرام سے اپیل کی کہ وہ شہریوں کو ڈینگی وائرس جیسے خطرناک مرض سے بچاو کے طریقوں اور تدابیر سے آگاہی کے ساتھ ساتھ ایسی تمام وبائی امراض کے مکمل خاتمہ کیلئے مساجد مےں نمازیوں سے خصوصی اجتماعی دعائیں کرائیں۔ علاوہ ازیں خیبر پی کے اور بلوچستان میں دہشت گردی کے واقعات اور کراچی میں امن و امان‘ مہنگائی اور بےروزگاری سے پیدا شدہ صورتحال پر اللہ تعالیٰ کے حضور استفسار کرتے ہوئے گڑگڑا کر دوعایں کی گئیں۔یوم دعا کے موقع پر سنی اتحاد کونسل کے چیئرمین صاحبزادہ حاجی محمد فضل کریم نے جامعہ رضویہ میں جمعة المبارک کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دعا کے ساتھ ساتھ دوا بھی ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ ڈینگی وبا پھیلنے سے پہلے حفاظتی انتظامات نہ کر کے حکمرانوں نے مجرمانہ غفلت کا مظاہرہ کیا ہے‘ اس لئے ڈینگی وائرس سے ہونے والی ہلاکتوں کی ایف آئی آر حکام کے خلاف درج ہونی چاہئے۔ یوم دعا کے سلسلہ میں کراچی میں حنیف طیب، طارق محبوب، ملتان میں مظہر سعید کاظمی، گجرات میں پیر افضل قادری، منڈی بہاﺅالدین میں پیر سید محفوظ مشہدی، میانوالی میں پیر سید صفدر شاہ گیلانی، بوریوالہ میں پیر سید محمد اقبال شاہ، گوجرانوالہ میں مولانا محمد اکبر نقشبندی، زاہد حبیب قادری، مولانا نصیر اویسی، فیصل آباد میں علامہ باغ علی رضوی، شاداب رضا نقشبندی، اوکاڑہ میں مفتی فضل الرحمن اوکاڑوی، ڈھڈیال آزاد کشمیر میں مولانا نواز بشیر جلالی نے جمعة المبارک کے اجتماعات سے خطاب کیا۔