ایران گیس منصوبہ: پاکستان نے پابندیاں لگانے کی امریکی دھمکی مسترد کر دی

اسلام آباد (اے این این) امریکہ نے پاکستان کو ایران کے ساتھ گیس پائپ لائن منصوبے سے پیچھے ہٹنے کا مشورہ دیتے ہوئے دھمکی دی کہ اگر پاکستان نے اس منصوبے کو جاری رکھا تو وہ پابندیاں لگانے پر مجبور ہو جائے گا‘ پاکستان نے واضح کر دیا ہے کہ وہ امریکی مخالفت کے باوجود اس منصوبے کو جاری رکھے گا۔ دونوں ممالک کے درمیان توانائی کے شعبہ میں ہونے والے دوروزہ سٹرٹیجک مذاکرات بغیر کسی نمایاں پیشرفت کے ختم ہو گئے۔ ایک انگریزی اخبارکی رپورٹ کے مطابق توانائی کے شعبہ میں سٹرٹیجک مذاکرات میں امریکی وفد کے سربراہ و توانائی کے عالمی امور کے لئے امریکی محکمہ خارجہ کے خصوصی سفیر کارلوس پاسکل نے پاکستان ایران گیس پائپ لائن منصوبے پر تحفظات اٹھائے اور پاکستان سے کہاکہ وہ اس منصوبے کوترک کر دے اور ایسا نہ کرنے کی صورت میں امریکہ پابندیاں لگا دے گا۔ امریکی سفارتخانے کے ترجمان نے تصدیق کی کہ پاک ایران گیس پائپ لائنے منصوبے پر امریکہ کو تحفظات ہیں اور سٹرٹیجک مذاکرات میں یہ معاملہ اٹھایا گیا ہے۔ ترجمان کے مطابق ہم پاکستان کی متبادل راستہ تلاش کرنے کے حوالے سے حوصلہ افزائی کر رہے ہیں۔ رپورٹ کے مطابق امریکی وفد نے پاکستان سے کہا کہ جب تک وہ توانائی کے شعبے میں اصلاحات نہیں لاتا امریکہ سے بڑے پیمانے پرکسی مددکی توقع نہ رکھے۔
گیس منصوبہ