پنجاب میں یونین کونسل کی سطح پر پیس واچ کمیٹیاں بنانے کا فیصلہ

لاہور (خبرنگار) حکومت پنجاب نے مجوزہ ”یوتھ والنٹیئر فورس“ کا نام تبدیل کر کے اس کا دائرہ کار آﺅٹ آف سکول نوجوانوں، دینی مدرسوں کے طلبہ وطالبات اور مقامی فلاحی تنظیموں تک وسیع کر دیا۔ پنجاب سٹیزن پیس والنٹیئر کور کے نئے نام سے تشکیل دی گئی 5 لاکھ سے زائد رضاکاروں کی یہ ”سٹیزن کور“ انتہا پسندی کے خاتمے اور مشکوک افراد کی نفرت انگیز سرگرمیوں کی نشاندہی کا کام سرانجام دینگے۔ یہ بات وزیر تعلیم پنجاب رانا مشہود احمد خاں نے جی سی یونیورسٹی لاہور کے کمیٹی روم میں سٹیزن پیس والنٹیئر کور کی صوبائی ایگزیکٹو کمیٹی کے اجلاس سے خطاب میں بتائی۔ ایگزیکٹو کمیٹی کے فوکل پرسن میاں نصیر احمد ایم پی اے، پنجاب یوتھ کاکس کے صدر وقاص حسن موکل، جنرل سیکرٹری میاں عرفان دولتانہ، پارلیمانی سیکرٹری مہوش سلطانہ، چیئر پرسن پنجاب سوشل سروسز بورڈ، کرن ڈار،وائس چانسلر جی سی یونیورسٹی نے شرکت کی۔ فیصلہ کیا گیا کہ پنجاب کی ہر یونین کونسل میں 15 ارکان پر مشتمل ”پیس وا چ گروپ“ تشکیل دیئے جائیں گے۔