لاہور،گوجرانوالہ، سیالکوٹ، پشاور سمیت کئی شہروں سے 335 مشتبہ افراد گرفتار

لاہور (سٹاف رپورٹر + نامہ نگار + نمائندگان +  ایجنسیاں) صوبائی دارالحکومت میں سرچ آپریشن  کے دوران 2  مبینہ دہشت گردوں سمیت 256  مشکوک افراد کو  گرفتار کر لیا گیا۔ بعد میں تفتیش  کیلئے نامعلوم مقام پر منتقل کر دیا گیا۔ سرچ آپریشن  کے دوران  2742 افراد کو چیک کیا گیا۔ ڈی آئی جی آپریشنز ڈاکٹر حیدر اشرف نے کہا کہ سرچ  سویپ  آپریشن ملک میں  حالیہ دہشت گردی اور سکیورٹی  خدشات  کے پیش نظر کیا گیا۔ پشاور  کے بیورو رپورٹ  کے مطابق  قانون نافذ کرنے والے اداروں نے بڈھ بیر میں کارروائی کے دوران کالعدم تنظیم کے 2 کارکنوں کو گرفتار کر لیا۔ پولیس نے بڈھ بیر کے علاقے میں فرنٹیئر روڈ پر چھاپہ مار کر کالعدم تنظیم کے 2 کارکنوں کو گرفتار کیا۔  ملزموں کے قبضے سے 2 دیسی ساختہ بم، 14 راکٹ، 4 دستی بم، 2 کلاشنکوف اور 1,000 کارتوس برآمد کر لئے۔ کوئٹہ  کے بیورو رپورٹ کے مطابق  صدر پولیس  نے دوران کارروائی  گاڑی کے خفیہ خانوں سے بھاری تعداد میں اسلحہ  اور گولیاں  برآمد کرکے دو دہشتگردوں کو گرفتار کر لیا دہشت گردوں کا تعلق پشاور سے ہے۔ شبہ ہے گرفتار دہشت گردوں  میں سے ایک کا تعلق  مذہبی کالعدم تنظیم سے ہے۔ ڈی آئی جی  نے بتایا دہشتگرد پشاور سے بھاری  مقدار میں اسلحہ جن میں گیارہ عدد کلاشنکوف، ایک عدد پسٹل، ایک ہزار چھ سو رائونڈ گولیاں ٹوڈی  کار کے خفیہ خانوں  میں چھپا کر براستہ  ڈیرہ اسماعیل خان، ژوب، زیارت، سبی  سے ہوتے ہوئے  اندرون سندھ سگل  کرنا چاہتے تھے۔ علاوہ ازیں ڈیرہ مراد جمالی  میں بھی سکیورٹی فورسز نے دو افراد کو گرفتار کرکے اسلحہ برآمد کر لیا۔  سکیورٹی  فورسز کے عملے نے دوران گشت  2  افراد اسحاق  اور نواز کو گرفتار  کرکے ان کے قبضے  سے 9 ایم ایم پسٹل، شارٹ گن اور  رائفل  برآمد کر لی۔ علاوہ ازیں کوئٹہ کے علاقے  بروری  روڈ پر فرنٹیئر  کور بلوچستانی  کے اہلکاروں نے دوران  چیکنگ  غیر قانونی طور پر پاکستان میں داخل ہونے والے 5  افغان باشندوں کو گرفتار کر لیا جن کے پاس کوئی قانونی سفری دستاویزات  نہیں تھیں۔ سیالکوٹ  کے نامہ نگار کے مطابق  سیالکوٹ  پولیس نے مشکوک غیر ملکی افراد  کے خلاف سپیشل  سرچ آپریشن  کے دوران 22  مشکوک افراد کو اپنی  حراست میں لیا گیا۔ ان مشکوک  افراد سے  تفتیش کے بعد 14 افراد کے  خلاف مقدمات درج کر لئے گئے۔ نارنگ منڈی کے نامہ نگار کے مطابق  نارنگ منڈی  پولیس  نے سرچ آپریشن کرتے ہوئے  محلہ  محمد پورہ نارنگ موڑ  اور مختلف  مقامات پر چھاپے مار کر 8 مشکوک  افغانیوں  کو گرفتار کر لیا جن کے پاس اپنی  شناخت  کی دستاویزات  موجود نہ تھیں اور وہ  خفیہ طور پر رہائش پذیر تھے۔  گرفتار ہونے  والوں میں شمالی خان، حضرت خان، خستہ خان،  عبدالوہاب  رسول خان، امیر بادشاہ اور ہدایت اللہ وغیرہ شامل ہیں۔ جہلم کے نامہ نگار  کے مطابق  تھانہ ڈومیلی  پولیس نے دوران گشت جھنڈا چوک میں 5  پیدل  افراد  سعادت اللہ، شفاعت اللہ، ذکی اللہ، اسلم اور حزب اللہ کو روکا جو افغانستان  کے رہنے والے تھے اور ڈومیلی  کے علاقے کسیال  میں رہائش پذیر تھے جس سے پاکستان  میں داخل ہونے،  رہائش رکھنے کے بارے میں اجازت نامہ اور پاسپورٹ  مانگا گیا جو پیش نہ کر سکے، تھانہ ڈومیلی  پولیس نے فارن  ایکٹ کے تحت  مقدمہ درج کر لیا۔ لاہور سے نامہ نگار  کے مطابق قانون نافذ کرنے والے اداروں نے ڈیفنس  کے علاقہ میں کارروائی کرتے ہوئے 2  مبینہ دہشت گردوں کو گرفتار کر لیا  ہے۔دونوں دہشت گردوں  سے حساس ادارے کے افسران  اور اہلکاروں کی لسٹیں  برآمد ہوئی ہیں۔ دونوں کو تفتیش  کے لئے نامعلوم مقام پر منتقل کر دیا گیا ہے۔ ذرائع  کے مطابق لسٹوں  میں ریٹائرڈ افسران اور اہلکاروں کے نام بھی شامل تھے جبکہ پولیس نے کسی  گرفتاری سے لاعلمی  کا اظہار کیا ہے۔گوجرانوالہ کے نمائندہ خصوصی  کے مطابق پولیس اور حساس اداروں  نے شہر کے مختلف  علاقوں میں سرچ آپریشن کے دوران 2 افغانیوں  سمیت 9 افراد کو حراست میں لے لیا۔ نوائے وقت رپورٹ کے مطابق  خوگاخیل  خیبر ایجنسی  میں سکیورٹی فورسز اور مقامی انتظامیہ کا مشترکہ سرچی آپریشن جاری ہے جس  میں گزشتہ روز 7 مشتبہ افراد کو گرفتار کیا گیا۔ گرفتار ہونیوالوں سے برآمد ہونیوالا اسلحہ میں 35 گولے، 2 اینٹی ٹینکی بارودی سرنگیں اور دیگر بارودی  مواد شامل ہے۔ مزید برآں  پولیس نے کچلاک میں سرچ آپریشن کرکے 20 مشتبہ افراد کو گرفتار کر لیا۔ ڈی ایس پی  کے مطابق گرفتار افراد میں  غیر ملکی بھی شامل  ہیں۔ غیر قانونی سمیں بھی برآمد کی گئی ہیں۔