بجلی کی لوڈشیڈنگ جاری، گیس بندش پر گوجرانوالہ میں خواتین کا ریجنل آفس کا گھیرائو

لاہور + گوجرانوالہ (نامہ نگاران +  نمائندہ خصوصی)  صوبائی دارالحکومت  سمیت کئی شہروں میں گزشتہ روز بھی گیس اور بجلی کی  بدترین لوڈشیڈنگ جاری رہی  گیس کی بندش  کیخلاف گوجرانوالہ میں احتجاج کے دوران خواتین  نے ریجنل آفس کا گھیرائو کر لیا اور  دھرنا دیا،  مشتعل خواتین  گیٹ  پر لاٹھیاں  برساتی رہیں، تفصیلات کے مطابق  شہروں اور دیہات میں گزشتہ روز بھی 12 سے 18 گھنٹے تک بجلی غائب رہی جس پر لوگ سراپا احتجاج بنے رہے جبکہ لاہور سمیت کئی شہروں میں گیس کی بندش بھی  برقرار رہی اور گھروں میں چولہے ٹھنڈے  رہے اور خواتین  کھانا تیار نہ کر سکیں  لوگ کھانا بازار سے  خریدنے پر مجبور ہو گئے۔ کوٹ مومن سے نامہ نگار کے مطابق  شہریوں نے گیس  کی بندش اور بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کے خلاف مظاہرہ کیا اور نعرے بازی  کی۔ ادھر  گوجرانوالہ  میں گزشتہ کئی ہفتوں سے جاری گیس کے بدترین بحران کے خلاف شہر کے مختلف علاقوں، معافی والا، گئوشالہ، شاہین آباد اور دیگر علاقوں کی درجنوں خواتین برتن اور لاٹھیاں اٹھا کرسوئی گیس کے ریجنل آفس پہنچیں اور دفتر کا گھیراؤ کر کے مشتعل خو اتین نے گیٹ پر لاٹھیاں برسائیں اور دھرنا دیا اس مو قع پر مظاہرین نے حکومت اور گیس حکام کیخلاف شدید نعرے بازی بھی کی خواتین کا کہنا تھا کہ گزشتہ دو ماہ سے گیس  بند ہے اور انہیں امور خانہ داری  کی انجام دہی میں شدید  مشکلات  کا سامنا ہے۔ شرقپور شریف سے نامہ نگار کے مطابق  گیس کی شدید بندش کا سلسلہ  گزشتہ روز بھی جاری رہا۔  گھروں میں گیس  نہ ہونے سے چولہے ٹھنڈے ہو گئے۔  شہری ناشتہ کرنے ہوٹلوں  کا رخ کرنے لگے۔   شہریوں نے شدید احتجاج کیا ہے، علاوہ ازیں بجلی کی  غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ  سے کاروبار ٹھپ ہو کر رہ گیا اور  لوڈشیڈنگ   14 سے 16  گھنٹے تک پہنچ  گئی،  پانی کی بھی قلت رہی۔