فیضان کے بیٹے کی حوالگی کے لئے درخواست پر فریقین کو گارڈین کورٹ سے رجوع کی ہدایت

 لاہور (وقائع نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے امریکی جاسوس ریمنڈ ڈیوس کے ہاتھوں قتل ہونے والے فیضان کے ڈیڑھ سالہ بیٹے کی حوالگی کے لئے دائر درخواست نمٹاتے ہوئے فریقین کو گارڈین کورٹ سے رجوع کرنے کی ہدایت کر دی ہے۔ جسٹس انوارالحق نے مقتول فیضان کے بھائی عمران کی طرف سے دائر درخواست کی سماعت کی تو درخواست گذار کی طرف سے عدالت کو بتایا گیا کہ مقتول فیضان کی بیوہ زہرہ کو اس کے والد نے ریمنڈ ڈیوس سے حاصل کی گئی دیت کی رقم کے لئے قتل کر دیا اب خدشہ ہے کہ فیضان کے ڈیڑھ سالہ بیٹے کو بھی رقم کی خاطر قتل کر دیا جائے گا۔ بچے کی خالہ کے وکیل نے عدالت کے روبرو اپنے دلائل میں کہا کہ بچہ ان کے پاس مکمل طور پر محفوظ ہے، اب فیضان کا خاندان صرف پیسوں کے لئے بچہ حاصل کرنا چاہتا ہے۔ عدالت نے وکلا کے دلائل کے بعد درخواست گذار کو ہدایت کی کہ وہ بچے کی حوالگی کے لئے گارڈین کورٹ سے رجوع کریں۔ فاضل عدالت نے گارڈین کورٹ کو بھی حکم دیا کہ کیس دائر ہونے کی صورت میں بچے کی حوالگی کیس کا فیصلہ ڈیڑھ ماہ میں کیا جائے۔