نظریہ پاکستان ٹرسٹ کا بشریٰ رحمن کو قومی خدمات پر خراج تحسین، دختر پاکستان کا خطاب

نظریہ پاکستان ٹرسٹ کا بشریٰ رحمن کو قومی خدمات پر خراج تحسین، دختر پاکستان کا خطاب

لاہور (خصوصی رپورٹر) نظریہ¿ پاکستان ٹرسٹ کے اکابرین پر مشتمل کمیٹی کا اجلاس ایوان کارکنان تحریک پاکستان لاہور میں منعقد ہوا جس میں وطن عزیزکی معروف ادیبہ، شاعرہ، کالم نگار اور سابق رکن قومی اسمبلی بیگم بشریٰ رحمن کی قومی خدمات کو زبردست خراج تحسین پیش کیا اور اعتراف خدمت کے طور پر انہیں ”دختر پاکستان“ کا خطاب دیا۔ کمیٹی کے ارکان نے کہا بیگم بشریٰ رحمن نے اپنے قلم کو نظریہ¿ پاکستان کی ترویج و ابلاغ کیلئے وقف کیا ہوا ہے اور وہ دو قومی نظریہ کے ناقدین کیلئے شمشیر بے نیام ہیں۔ انہوں نے اندرون و بیرون ملک ہر فورم پر بانی¿ پاکستان قائداعظم محمد علی جناحؒ کے نظریات وتصورات کو اجاگرکیا ہے اور اپنے کالموں میں مفکر پاکستان علامہ محمد اقبالؒ کی فکر، فلسفہ اور شاعری پر ہمیشہ توجہ مرکوز رکھی ہے۔ ارکان نے نظریہ¿ پاکستان ٹرسٹ کے اغراض و مقاصد کو آگے بڑھانے کیلئے بیگم بشریٰ رحمن کی بے لوث خدمات کو شاندار الفاظ میں سراہتے ہوئے کہا جب سے ٹرسٹ قائم ہوا ہے، تب سے ہی بیگم بشریٰ رحمن اس سے وابستہ ہیں اور انہوں نے اپنی تحریر و تقریر کے ذریعے پاکستان کے اساسی نظریے کے تحفظ اور عوام الناس بالخصوص نسل نو میں پاکستانیت کے جذبات کو بیدار کرنے کیلئے ان تھک محنت کی ہے۔ انہوں نے قومی اسمبلی کی رکن کی حیثیت سے بھی کشمیر، بھارت کی آبی جارحیت، پاکستان کی داخلی خودمختاری پر دوٹوک موقف اختیار کیا ہے اور پاکستانی قوم کے جذبات کی صحیح ترجمانی کی ہے۔ انہوں نے اسمبلی کے فلور پر پاکستان کیخلاف بھارتی سازشوں کو بے نقاب کیا ہے۔ مزید برآں 14 جون 2010ءکو قومی اسمبلی کے اندر بیگم بشریٰ رحمن نے کالا باغ ڈیم کے ایشو کو بھرپور طریقے سے اٹھایا۔ 23برس تک اس ایشو کو مردہ سمجھا جاتا رہا تھا۔ انہوں نے اسمبلی کے فلور پر ثابت کیا کالاباغ ڈیم بنائے بغیر پاکستان کی معیشت ترقی نہیں کرسکتی۔ واضح رہے پنجاب کی صوبائی اسمبلی نے1990ءمیں بیگم بشریٰ رحمن کو ”قادرالکلام، شیریں بیان، بلبل پاکستان“ کا خطاب دیا تھا۔ بیگم بشریٰ رحمن کی اب تک 40کتابیں شائع ہوچکی ہیں جن میں ناول، افسانے، شاعری اور سفرنامے شامل ہیں۔ ان کے مشہور و معروف کالم ”چادر، چاردیواری اور چاندنی“ کے پانچ اور فی البدیہہ تقاریر پر مشتمل تین مجموعے شائع ہوچکے ہیں۔