غلطی ایل ڈی اے کی، سزا اقبال ٹاﺅن انتظامیہ کو مل گئی

لاہور (خبر نگار) ایل ڈی اے کی غلطی کی سزا اقبال ٹاﺅن انتظامیہ کو بھگتنا پڑ گئی۔ ذرائع کے مطابق وزیراعلی اتوار کی شام پی آئی اے کالونی جوہر آباﺅن کی مرکزی شاہراہ سے گزرے تو تہہ خانے کی کھدائی کے باعث سڑک پر مٹی کا ڈھیر دیکھ کر وزیراعلی نے رپورٹ مانگی تو انہیں بتایا گیا کہ اسی ”غلطی“ کی ذمہ داری اقبال ٹاﺅن انتظامیہ کی ہے۔ جس پر انہوں نے اے سی امیر حسن اور ٹی ایم او علی حسن جعفری کے فوری تبادلے کے احکامات جاری کر دیئے۔ حالانکہ پی آئی اے کالونی ایل ڈی اے کی ”عمل داری“ میں ہے اور جس عمارت کی تعمیر کے لئے تہہ خانہ کھودا جا رہا تھا اس کا نقشہ بھی ایل ڈی اے نے پاس کیا تھا اور مٹی اٹھوانے کی ذمہ داری بھی ایل ڈی اے انتظامیہ کی تھی۔ اے سی اور ایڈمنسٹریٹر امیر حسن پی سی ایس افسر ہیں اور ڈی سی او نسیم صادق جو خود بھی پی سی ایس افسر ہیں انہیں فیصل آباد سے اپنے ساتھ لاہور لائے تھے۔ مگر کمشنر لاہور امداد اللہ بوسال اور ڈی سی او لاہور نسیم صادق کے درمیان جاری ڈی ایم جی اور پی سی ایس چپقلش کی نظر تین افسر ہو چکے ہیں۔