عیدالاضحی: پنجاب بھر میں سکیورٹی پلان کو حتمی شکل دےدی گئی، پولیس افسران اور اہلکاروں کی چھٹیاں منسوخ

لاہور (نامہ نگار + خصوصی نامہ نگار) عیدالاضحیٰ کے موقع پر امن و امان اور شہریوں کے تحفظ کے لئے صوبے بھر میں سکیورٹی پلان کو حتمی شکل دے دی گئی ہے جس کے مطابق تمام افسروں اور اہلکاروں کی چھٹیاں منسوخ کرنے اورتمام ٹریننگ سنٹرز کو کھلا رکھنے کے فےصلے کے ساتھ ساتھ 61491 افسروں و اہلکاروںکو حساس مقامات ، تجارتی مراکز، مساجد، مدارس اور اہم سرکاری عمارات پر تعےنات کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ سکیورٹی پلان کو حتمی شکل گزشتہ روز سنٹرل پولیس آفس لاہور میں آئی جی پنجاب خان بیگ کی سربراہی میں منعقد ہونے والی اک اعلیٰ سطحی میٹنگ میں دی گئی۔ صوبے بھر میں حساس مقامات پر153واک تھرو گیٹس، 8512میٹل ڈٹییکٹر اور 226سی سی ٹی وی کیمرے نصب کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے۔یہ اہلکار 15550مساجد، 1197امام بارگاہوں اور 1325کھلے مقامات پر نمازےوں کے علاوہ دےگر 18071مقامات پربھی سےکےورٹی کے فرائض ادا کرےں گے۔ عیدالاضحیٰکے موقع پر ملک بھر میں سکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات ترتیب دیئے گئے ہیں، صوبائی دارالحکومت میں نماز عید کے بڑے اجتماعات بادشاہی مسجد، قذافی سٹیڈیم، داتادربار، جامعہ اشرفیہ، جامعتہ المنتظر، جامعہ نعیمیہ، باغ جناح، ریس کورس پارک، مینار پاکستان ، مسجد وزیر خان، جامع مسجد منصورہ، مسجد شہدا، جامعہ رحمانیہ، جامعہ غوثیہ رضویہ گلبرگ، فردوس مارکیٹ چوک سمیت شہر کی مساجد اور عید گاہوں میں ادا کی جائے گی۔ کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے بچنے کے شہر کی مساجد، امام بارگاہوں عید گاہوں پر پولیس کی بھاری نفری حفاظتی خدمات سرانجام دے دے گی۔