لاہور ہائیکورٹ میں موبائل کیمرے سے وکلا کی فوٹیج بنانے والے 2افراد سکیورٹی حکام کے حوالے، مقدمہ درج

لاہور (وقائع نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ میں پولیس نے وکلا کی موبائل کیمرے سے فوٹیج بنانے والے دو افراد کو حراست میں لے کر سکیورٹی حکام کے حوالے کر دیا۔ مسٹر جسٹس شیخ نجم الحسن کی عدالت کے باہر ملزم غلام حسین کے کیس کی پیروی کرنے والے وکلا کی دو افراد خفیہ طریقے سے فوٹیج بنارہے تھے اچانک ایک وکیل کی نظر پڑ گئی جس کے بعد وکلا کی بڑی تعداد نے دونوں کو تشدد کا نشانہ بنایا۔ ہائیکورٹ کے سکیورٹی افسر موقع پر پہنچ گئے اور دونوں افراد منیر اور آصف جاوید کوحراست میں لیکر ان کے موبائل فون قبضے میں لے لیا بعدازاں ملزم کیخلاف تھانہ پرانی انارکلی منتقل کرکے مقدمہ بھی درج کرلیا گیا، دونوں افراد ملزم کے عزیزواقارب بتائے جارہے ہیں ۔