عدالت میں غلط بیانی پر چوکی انچارج فردوس مارکیٹ کے خلاف قانونی کارروائی کا حکم

لاہور (اپنے نامہ نگار سے) ایڈیشنل سیشن جج نے عدالت کے روبرو غلط بیان دینے پر چوکی انچارج فردوس مارکیٹ کے خلاف قانونی کارروائی کرنے کا حکم دیدیا۔ تفصیلات کے مطابق گلبرگ کی رہائشی خاتون صائمہ شہزادی نے عدالت کے روبرو اندراج مقدمہ کی درخواست دائر کر رکھی ہے جس میں م¶قف اختیار کیا ہے کہ سائلہ نے پسند کی شادی 11 ستمبر 2011ءکو سید جواہر ظہیر کے ساتھ کی تھی جو ایک دھوکہ باز شخص نکلا جس پر سائلہ نے فیملی کورٹ سے 20 جولائی 2012ءکو طلاق کی ڈگری حاصل کر لی۔ بعدازاں میرا سابقہ شوہر جواہر ظہیر مجھے تنگ کرنے کے مختلف حربے استعمال کرتا رہا۔ اس حوالے سے میں نے فردوس مارکیٹ پولیس چوکی سے رجو ع کیا مگر انہوں نے مقدمہ درج کرنے سے انکار کر دیا۔ جس پر فاضل عدالت نے چوکی انچارج فردوس مارکیٹ سے جواب طلب کیا تو اس نے عدالت میں بیان دیا کہ فریقین کے درمیان صلح ہو چکی ہے جبکہ سائلہ نے عدالت کے روبرو آ کر کہا کہ ہمارے درمیان کوئی صلح نہیں ہوئی جس پر فاضل عدالت نے سی سی پی او لاہور کو حکم دیا کہ مذکورہ چوکی انچارج کےخلاف محکمانہ طور پر اور قانون کے مطابق کارروائی کی جائے۔