ویزاکیس، پاکستانی طالب علم نے برطانوی عدالت میں مقدمہ جیت لیا

لاہور (اپنے نامہ نگار سے) پاکستانی طالب علم نے برطانوی عدالت میں اپنا کیس جیت لیا، برطانوی عدالت نے ویزہ افسروں کو تعلیم کے حصول کے لئے برطانیہ آنے والے طالب علموں سے غیرضروری سوالات پوچھنے سے روک دیا۔ عدالت نے فیصلے میں کہا ہے کہ ویزہ افسران کے قانون سے ہٹ کر کئے گئے فیصلوں کی کوئی قانونی حیثیت نہیں۔ مانچسٹر ہائیکورٹ کے جج میک کلاسکی نے کیس کی سماعت کی۔ درخواست گزار پاکستانی طالب علم عدنان مشتاق کے وکیل امجد ملک نے دلائل دیے۔ انہوں نے عدالت کو بتایا کہ طالب علم کے تعلیمی پوائنٹس اور دستاویزات مکمل ہونے کے باوجود ویزہ افسر نے اطمینان نہ ہونے سے پر ویزہ کی درخواست مسترد کر دی۔ عدالت نے فریقین کے وکلاء کے دلائل سننے کے بعد فیصلہ سنا دیا۔ عدالت نے فیصلے میں تحریر کیا کہ غریب ممالک سے آنے والے طالب علم یہ حق رکھتے ہیں کہ ان کا موقف درست طریقے سے سنا اور سمجھا جائے۔