واپڈا ملازمین کا احتجاج ختم، پیر سے فیسکو آفس کے سامنے دھرنے کا اعلان

واپڈا ملازمین کا احتجاج ختم، پیر سے فیسکو آفس کے سامنے دھرنے کا اعلان

 لاہور (نیوز رپورٹر) واپڈا ملازمین نے احتجاج ختم کرتے ہوئے پیر سے فیصل آباد میں فیسکو ہیڈ آفس کے باہر احتجاجی دھرنے کا اعلان کر دیا گیا ہے۔ گزشتہ روز احتجاج کے باعث شہری ٹریفک بند ہونے سے خوار ہوتے رہے۔ تفصیلات کے مطابق لیسکو ملازمین دفتری اوقات شروع ہونے سے قبل ہیڈ آفس سمیت سرکل ، ڈویژنل اور سب ڈویژنل دفاتر کے باہر جمع ہو گئے اور انہوں نے تالا بندی کرتے ہوئے کسی بھی افسر کو دفتر میں داخل نہیں ہونے دیا۔ ہڑتال و احتجاج کے باعث تمام دفاتر میں کام مکمل ہی ٹھپ رہا۔ جن علاقوں میں بارش سے ٹرانسفارمرز جل گئے یا دیگر نقص پیدا ہو گیا ان علاقوں میں بھی مرمت یا بحالی کے لئے لائن مین کی جانب سے کوئی کام نہیں کیا گیا ۔ سب ڈویژنوں میں شکایات ہی نہیں درج کی گئیں۔ لیسکو ہیڈ آفس کے باہر دھرنا و احتجاج کے باعث ٹریفک شدید متاثر ہوئی مال روڈ سمیت دیگر ملحقہ سڑکوں پر دفتری اوقات کے خاتمہ تک ٹریفک شدید بلاک رہی گاڑیوں نے چند منٹوں کا سفر گھنٹوں میں طے کیا۔ واپڈا ہائیڈل یونین کے عہدیداروں نے اپنے خطاب میں کہا پیر سے احتجاجی دھرنا فیصل آباد میں فیسکو ہیڈ آفس کے باہر بھی شروع ہو گا تاہم صوبائی دارالحکومت میں احتجاج کا سلسلہ جاری رکھا جائے گا۔ ملازمین نے احتجاج میں واپڈا ہاﺅس اور گورنر ہاﺅس سمیت لیسکو کے تمام وی آئی بی فیڈرز بند کرنے کے بھی دھمکی دی۔ بصیرپور سے نامہ نگار کے مطابق لاہورالیکٹرک سپلائی کمپنی کے سربراہ کی تقرری کے طریق کار پر بصیرپور میں لیسکوکے دفاتر پر دوسرے روز بھی تالے پڑے رہے اور ملازمین نے مکمل ہڑتال کرکے لاہور میں احتجاج میں شمولیت کی۔ جس سے لیسکو دفاترآنے والے صارفین خوارہوتے رہے۔
احتجاج جاری