میانمار میں مسلمانوں کے قتل عام کیخلاف سنی اتحاد کونسل کے اقوام متحدہ کو احتجاجی خطوط ارسال

میانمار میں مسلمانوں کے قتل عام کیخلاف سنی اتحاد کونسل کے اقوام متحدہ کو احتجاجی خطوط ارسال

لاہور(خصوصی نامہ نگار) سنی اتحاد کونسل پاکستان کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے میانمار کے مسلمانوں کے قتل عام کے خلاف اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل، او آئی سی اور مسلم حکمرانوں کو احتجاجی خطوط ارسال کر دیئے ہیں۔ ان خطوط میں برما کے مظلوم مسلمانوں کی حالت زار بیان کر کے اقوام متحدہ، او آئی سی اور مسلم حکمرانوں سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ برمی مسلمانوں کے تحفظ کے لیے اپنی ذمہ داریاں پوری کریں اور میانمار کے مسلمانوں کے حق میں عالمی سطح پر آواز اٹھائیں۔ سنی اتحاد کونسل پاکستان کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے کہا ہے کہ سُنّی اتحاد کونسل عید کے بعد ”نظام مصطفی نافذ کروتحرےک“ چلائے گی، قوم کی تقدیرتقریر سے نہےں تدبےر سے بدلے گی، بقائے پاکستان اور تعمیرپاکستان کے لیے پوری قوم متحد ہو جائے، اقتصادےات کودینےات کے تابع کرنے سے معاشی مسائل حل ہوں گے، اسلامی معاشی نظام اپنا کر ملک مےں برکت لائی جاسکتی ہے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے مختلف وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ صاحبزادہ حامد رضا نے کہا کہ سستی بجلی صرف کالاباغ ڈیم سے مل سکتی ہے۔ کراچی میں خونی کھیل کے پیچھے بیرونی قوتوں کا ہاتھ ہے۔ حکمران عوام کی بددعاﺅں سے بچنے کے لیے محروم طبقات کو ریلیف فراہم کریں۔ ورلڈ بےنک اور آئی اےم اےف کی غلامی سے نجات حاصل کرنا ہوگی۔بھارت کی بجائے چین اور ایران کے ساتھ بجلی کے معاہدے کئے جائیں۔