لاہور میں لاکھوں کی ڈکیتیاں‘ حافظ آباد میں مزاحمت پر شہری قتل

لاہور (نامہ نگار) صوبائی دارالحکومت کے مختلف علاقوں میںڈاکوﺅں اور چوروں نے وارداتوں کے دوران متعدد شہریوں سے لاکھوں روپے مالیت کی نقدی، طلائی زیورات،موبائل فون، گاڑیاں ، موٹر سائیکلےں اور دےگر سامان لوٹ لیا جبکہ رےس کورس کے علاقہ مےسن روڈ پر ڈاکوو¿ں نے سکےورٹی گارڈ کو نشہ آور شربت پلانے کے بعد تشدد کا نشانہ بناکر شدےد زخمی کر دےا۔تفصےلات کے مطابق سو ل لائن کے علاقہ مےسن روڈ پر 4 مسلح ڈاکوﺅں نے سکےورٹی گارڈ نواز کوگن پوائنٹ پر ےرغمال بنا کر زبردستی نشہ آور شربت پلانے کے بعد اسے تشدد کا نشانہ بناکر شدےد زخمی کر دےا۔جس کے بعدڈاکوﺅں نے سکےورٹی گارڈ نواز کو رسےوں سے باندھ دےا اور اس کی جےب سے پانچ ہزار روپے اور موبائل فون لوٹ کر فرار ہو گئے۔ ڈاکوﺅںنے شاہدرہ میں نجم الدین کے گھر میں گھس کراہلخانہ کو گن پوائنٹ پر ےرغمال بنا کر10لاکھ مالیت ، کاہنہ میں شہزاد کے گھر سے8لاکھ روپے مالیت، قلعہ گجر سنگھ میں شہباز کے گھر سے8لاکھ مالیت ،فیکٹری ایریا میں ریاست کے گھر سے6لاکھ مالیت، ملت پارک میں جاوید کے گھر سے5لاکھ مالیت ، اچھرہ میں شکور کے گھر سے5لاکھ مالیت ،گارڈن ٹاﺅن میں محمود کے گھر سے4لاکھ مالیت ، شادباغ میں لطیف کے گھر سے4لاکھ مالیت، مناواں میں نثار کے گھر سے3لاکھ مالیت، برکی میں الطاف کے گھر سے3لاکھ مالیت، بادامی باغ میں محسن کے گھر سے3لاکھ روپے مالیت کی نقدی، طلائی زیورات،موبائل فون اور دےگر سامان لوٹ لیا۔ ڈاکوﺅں نے غالب مارکیٹ میں نواز اور اس کی فیملی سے اڑھائی لاکھ روپے مالیت ، مسلم ٹاﺅن میں نوید اور اس کی فیملی سے2لاکھ مالیت ، بھاٹی گیٹ میں کاشف اور اس کی فیملی سے ایک لاکھ مالیت ، شالیمار میں جاوید اورا س کی فیملی سے ایک لاکھ مالیت، جوہر ٹاﺅن میں شاہد اور اس کی فیملی سے ایک لاکھ مالیت ، مغلپورہ میں ساجد کی فیملی سے ایک لاکھ مالیت کی نقدی، طلائی زیورات اور موبائل فون لوٹ لئے ۔ڈاکوو¿ں نے گلشن اقبال کے علاقہ مےں شےخ عامر شہزادسے 70ہزارروپے ،موبائل فون اور کار کی چابی۔ راوی روڈ میںطاہر سے ایک لاکھ روپے اور موبائل فون۔گلبرگ میں ناصر سے ایک لاکھ روپے اور موبائل فون لوٹ لےا۔مصطفی آباد کے علاقہ مےں جےب تراشوں نے نوائے وقت کے سےنئر کارکن احمد محمود بٹ عرف چاندی بٹ کی جےب سے پانچ ہزار روپے،موبائل فون،شناختی کارڈ ، نوائے وقت کا کارڈو دےگر کاغذات نکال لئے۔ چوروں نے ماڈل ٹاﺅن میں سے محسن ،گارڈن ٹاﺅن سے واجد، ڈیفنس اے سے افتخارکی گاڑیاں جبکہ نواب ٹاﺅن میں سے عمران، اسلام پورہ سے زاہد، وحدت کالونی سے یاسین،نصیر آباد سے عارف،نیو انار کلی سے فہیم،لیاقت آباد سے فرحان کی موٹر سائیکلیں چوری کر لےں۔ حافظ آباد میں ڈکیتی کی ایک واردات کے دوران مزاحمت پر پانچ مسلح ڈاکوو¿ں نے اندھا دھند فائرنگ کر کے ایک شخص کو ہلاک جبکہ دوسرے کو شدید زخمی کر دیا۔ ٹھٹھی بہلول پور میں محمد قاسم اور مستنصر اپنے مویشیوں کے ڈیرہ میں سوئے ہوئے تھے کہ پانچ مسلح ڈاکو آئے جنہوں نے لاکھوں روپے مالیت کے مویشی لیجانے کی کوشش کی تو قاسم اور مستنصر نے مزاحمت کی جس پر ڈاکوو¿ں نے اندھا دھند فائرنگ کر کے مستنصر کو ہلاک جبکہ قاسم کو شدید زخمی کر دیا۔ ڈکیتی کی دوسری واردات کٹھرانی کے قریب ہوئی جہاں 5مسلح ڈاکوو¿ں نے ڈیری فارم کے مینجر شفقت علی اور اس کے 2ساتھیوں عامر اور سلطان کی کارکو روک کر ان سے قیمتی موبائل اور 20ہزارسے زائد نقدی لوٹ لی اور فرار ہوگئے۔ ڈکیتی کی تیسری واردات سکھیکی کے قریب ہوئی جہاں محمد انور کار پر سوار ہو کر موٹر وے انٹر چینج سے اتر کر اپنے گاو¿ں جا رہا تھا کہ راستہ میں5ڈاکوو¿ں نے اُسے روک کر موبائل اور 18ہزار نقدی لوٹ لی اور فرار ہوگئے۔ایک ہی رات میں ڈکیتی کی 3مختلف وارداتوں کے بعد ضلع کے عوام میں غم و غصہ کی لہر سرایت کر گئی۔ دوسری جانب ڈکیتی کے دوران قتل ہونے والے نوجوان کے لواحقین نے تھانہ صدرپنڈی بھٹیاں کے سامنے احتجاجی مظاہر ہ کرتے ہوئے پولیس کے خلاف زبردست نعرہ بازی کی۔
ڈکیتیاں